Back

ⓘ جبرو برطانوی راج میں 1895ء کا سچا واقعہ۔ یہ پنجابی فلم تھی، ہدایت کار مظہر طاہر تھے، موسیقی عاشق حسین کی تھی۔ اس میں اکمل نے اداکارہ یاسمین شوکت کے ساتھ لیڈ رول ..




                                     

ⓘ جبرو

جبرو برطانوی راج میں 1895ء کا سچا واقعہ۔ یہ پنجابی فلم تھی، ہدایت کار مظہر طاہر تھے، موسیقی عاشق حسین کی تھی۔ اس میں اکمل نے اداکارہ یاسمین شوکت کے ساتھ لیڈ رول پلے کیا تھا جبکہ اداکار طالش بھی اپنے ابتدائی دور میں اس میں کام کر رہے تھے اور یہ فلم ان کی زندگی کی تیسری فلم تھی، اس میں اداکارہ شاہینہ نے بھی اہم رول ادا کیا تھا۔ فلم ’’جبرو‘‘ 6 جولائی 1956ء کو ریلیز ہوئی اور ہٹ ہوگئی۔ اداکار اکمل اپنی پہلی ہی فلم سے ہٹ ہو کر سامنے آئے تھے اور شائقین فلم نے ان کی بھرپور حوصلہ افزائی کی تھی اور ان کی اداکاری کو بے حد پسند کیا تھا۔ مزے کی بات یہ ہی پاکستان فلم انڈسٹری مشہور اداکار اکمل خان عنوان کردار میں متعارف کرایا گیا اور طالش نے مزاحیہ کردار ادا کیا۔

فلم کی موسیقی عاشق حسین ان کی پہلی فلم جبرو 1956ء میں تھی، اور اس نے مشہور دھمال کو متعارف کرایا۔ جو اصل میں صوفی لعل شہباز قلندر کے پیروکاروں نے سندھ میں اپنے مزار پر گھیر لیا تھا۔ فلم کے نغمات تنویر نقوی، سکیدار، حافظ امرتسری، سیف الدین سیف اور ساگر صدیقی نے گیت لکھے۔ فلم کی لسٹ ریکارڈنگ میں شامل فقیر سید صلاح الدین انہوں نے گیتوں کی بہترین ریکارڈنگ کی اور کوثر پروین، عنایت حسین بھٹی، اے آر بسمل اور فضل حسین نے گیت گائے۔

                                     

1. بیرونی روابط

  • جبرو آئی ایم ڈی بی پر انگریزی میں
  • جبرو ” پاکستان فلم میگزین" ◄ پر
  • جبرو ” فلم موشن پکچر آرکایو آف پاکستان" ◄ پر
  • جبرو ” فلم ڈیٹابیس" ◄ Citwf پر
  • جبرو 1956ء کی ہسٹری فلم یوٹیوب پر