Back

ⓘ میل, فلکیات. فلکیات میں میل استوائی متناسق نظام میں کرہ سماوی پر موجود دو زاویوں میں سے ایک ہے، دوسرا زاویہ ساعت ہے۔ میل خط استوا سماوی سے شمال یا جنوب میں ناپا ..




میل (فلکیات)
                                     

ⓘ میل (فلکیات)

فلکیات میں میل استوائی متناسق نظام میں کرہ سماوی پر موجود دو زاویوں میں سے ایک ہے، دوسرا زاویہ ساعت ہے۔ میل خط استوا سماوی سے شمال یا جنوب میں ناپا جاتا ہے۔

                                     

1. وضاحت

فلکیات میں میل جغرافیائی عرض بلد کے ہم پلہ ہے، جو استوائی متناسق نظام میں کرہ سماوی پر موجود خط استوا سماوی سے شمالاً جنوباً فاصلہ ہے، جس کی پیمائش زاویوں میں کی جاتی ہے۔ اور اسی طرح زاویہ ساعت یا مطلع مستقیم جغرافیائی طول بلد کے ہم پلہ ہے۔ وہ نقاط جو خط استوا سماوی سے شمال کی جانب ہیں ان کا میل مثبت جبکہ وہ نقاط جو خط استوا سماوی سے جنوب کی طرف ہیں ان کا میل منفی ہے۔ میل کی پیمائش کے لیے کوئی بھی زاویائی اکائی استعمال کی جا سکتی ہے لیکن عام طور پر اسے درجہ زاویہ °، دقیقہ وقت اور ثانیہ میں ناپا جاتا ہے۔°90 سے زیادہ کا میل نہیں ہوتا کیونکہ قطبین سماوی، کرہ سماوی کے انتہائی شمالی اور انتہائی جنوبی نقاط ہیں۔

                                     
  • میل ضد ابہام کے کئی استعمالات ہیں آپ کا مطلوبہ مضمون ذیل میں درج موضوعات میں موجود ہوگا: میل لمبائی میل فلکیات
  • تیرہویں صدی عیسوی کے مشہور ماہر فلکیات قطب الدین شیرازی کی شبیہ جس میں نظام شمسی کا نقشہ دکھایا گیا ہے قرون وسطی میں مسلمانوں کے اقتدار پھیلنے کے ساتھ
  • کے ساتھ نقطہ اعتدال ربیعی سے مشرقی جانب ماپا جاتا ہے مطلع مستقیم اور میل فلکیات استوائی متناسق نظام میں کرہ سماوی پر کسی نقطہ یا جرم سماوی کا مقام
  • قطبین ہیں اس متناسق نظام کے تحت قطب سماوی شمالی کا میل فلکیات 90 درجہ شمال 90 ہے اور قطب سماوی جنوبی کا میل فلکیات 90 درجہ جنوب 90 - ہے
  • جغرافیہ دان اور ماہرین فلکیات استعمال کیا کرتے تھے اب ا س اکائی کی بجائے ناٹیکل میل استعمال ہوتا ہے ابن کثیر فرغانی کے مطابق عربی میل 4000 ذراع کے برابر
  • آسمان کا 2.72 فی صد بنتا ہے مطلع مستقیم 22 گھنٹے 41.84 منٹ ہے اور میل فلکیات 19 ڈگری 27.98 منٹ شمال ہے اس مجمع النجوم میں ایسے ستاروں کی تعداد جن
  • جن مسلم فلکیات دانوں نے فلکی مشاہدات میں حصہ لیا حبش بھی ا ن میں شامل تھے حبش کے پیمائش کردہ فلکی کوائف یوں ہیں: زمین کا محیط: 20, 160 میل 32, 444 کلومیٹر
  • گیا ہے ستارۂ شعری یمانی فلکیاتی منزل کلب اکبر کا سب سے روشن ستارہ ہے جو قدیم ا نسانی مشاہدوں میں شامل ہے شعری یمانی فلکیات تقویم مصریات مصری تقویم
  • 1877 عیسوی میں امریکی فلکیات دان آساف ھال Asaph Hall نے دریافت کیے. فوبوس چھوٹا اور بے ڈھنگ شکل کا ہے اس کا رداس صرف 7 میل یعنی 11 کلومیٹر ہے اور