Back

ⓘ انسانی ہنر ..




                                               

لباس

لباس یا پوشاک ، پہناوے کو لباس کہتے ہیں۔ پوشاک، کپڑے، جامہ، پوشش۔ لباس دنیا کے مختلف ممالک مختلف علاقہ جات میں اپنی روایات اور روائش یا فیشن کے مطابق پہنا اور استعمال کیا جاتا ہے۔ ان روایات میں مذہبی، ثقافتی روایات، رسم و رواج، جغرافیائی عوامل کا بھی اہم اور نمایاں کردار پایا جاتا ہے۔ امام راغب اصفہانی نے لباس کے لغوی معنیٰ بیان کرتے ہوئے بڑی عمدہ تشریح فرمائی ہے چنانچہ لکھتے ہیں کہ ’’ہر وہ چیز جو انسان کی بری اور ناپسندیدہ چیز کو چھپا لے اسے لباس کہتے ہیں شوہر اپنی بیوی اور بیوی اپنے شوہر کو بری چیزوں سے چھپا لیتی ہے، وہ ایک دوسرے کی پارسائی کی حفاظت کرتے ہیں اور پارسائی کے خلاف چیزوں سے ...

                                     

ⓘ انسانی ہنر

  • Competence ایک اصطلاح ہے جس کا انسانی وسائل میں بہ کثرت استعمال ہوتا ہے اس کا استعمال ان دکھائی پڑنے والی خصوصیات اور ہنر کو کہا جاتا ہے جو کسی کام کی
  • اس سے مراد وہ رسمی طریقہ کار ہے جس کے ذریعے ایک معاشرہ اپنا مجموعی علم ہنر روایات اور اقدار ایک نسل سے دوسری نسل کو منتقل کرتا ہے عموما اسکول میں
  • کے مطالعے کو کہا جاتا ہے اور بنیادی طور پر اس سے مراد ایسا تخلیقی کام اور ہنر ہوتا ہے کہ جو کسی پیشہ ورانہ نقطۂ نظر کی بجائے انسان کی فطری صلاحیت سے زیادہ
  • بنیاد پر بنے ہوئے سارے رشتے انسانی درندگی کی نظر ہو گئی ان امکانات پر 1947 کے درمیان جو سماج ملتا ہے وہ عقل و شعور ادراق ہنر سماجی رشتے اور رسم و رواج
  • بارے میں لکھا ہے جب ہومو سیپینز نے حریف نیندرٹھالوں کی سرکوبی کی زبان کی ہنر اور ڈھانچے والے معاشرے تیار کیے اور زرعی انقلاب کی مدد سے اور سائنسی طریقہ
  • علم وغیرہ ممکن ہے اس کا مظاہرہ انسانوں اور جانوروں ہو چکا ہے تجسس کا انسانی نشو و نما سے گہرا تعلق ہے یہ حصول علم کے محرکات میں سے ایک ہے اور اس کے
  • طرح بچہ کوئی ہنر سیکھ لے گا ایسے کاریگروں کو استاد کہا جاتا ہے یہ بچے بھی اکثر استاد کے تشدد کا نشانہ بنتے ہیں اور زیادہ تر کوئی ہنر سیکھنے میں بھی
  • نئی جہت اختیار کر کے نہ صرف یہ کہ شیشہ سازی کی انسانی تاریخ میں اب تک ہونے والی شیشہ سازی کی معلومات و ہنر کو فنا اور معدوم ہو جانے سے بچایا بلکہ یہی اسلامی
  • سحر کیا بے معجزہ دنیا میں ابھرتی نہیں قومیں جو ضرب کلیمی نہیں رکھتی و ہ ہنر کیا نظریہ فن کے بارے میں اقبال اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے فرماتے ہیں
  • یوں کی جاسکتی ہے کہ فنیات میں وہ شعبہ جات آجاتے ہیں جو انسان اپنی قدرتی ہنر مندی اور صلاحیت کے ذریعہ کرتا ہے اور سائنس میں وہ شعبہ جات آتے ہیں جنمیں