ⓘ Free online encyclopedia. Did you know? page 67




                                               

عثمان اول

عثمان کے والد ارطغرل کی وفات کے بعد سلاجقہ روم کے دار الحکومت قونیہ پر منگولوں کے قبضے اور سلجوقی سلطنت کے خاتمے کے بعد عثمان کی جاگیر خود مختار ہو گئی جو بعد میں سلطنت عثمانیہ کہلائی۔ عثمان خان کی جاگیر کی سرحد قسطنطنیہ کی بازنطینی سلطنت سے ملی ...

                                               

علاء الدین پاشا (وزیراعظم)

علاء الدین پاشا کا سنہ پیدائش معلوم نہیں ہو سکا، البتہ وہ ترک نسل کے باشندے تھے۔ علاء الدین پاشا کی پیدائش موجودہ ترکی کے شہر نالیحان کے ایک قصبہ شاندرے، نالیحان میں ہوئی تھی۔ علاء الدین کے والد کمال الدین تھے۔ علاء الدین پاشا عموماً حاجی کمال ال ...

                                               

محمد اول

محمد اول سلطنت عثمانیہ کے سلطان اور دوسرے بانی تھے۔ وہ بایزید اول کے صاحبزادے تھے۔ جنگ انقرہ میں بایزید یلدرم کی امیر تیمور کے ہاتھوں شکست اور سلطنت عثمانیہ کے ٹکڑوں میں تقسیم ہونے کے بعد محمد اول نے ادرنہ ایڈریانوپل میں تخت سنبھالا اور دار الحکو ...

                                               

محمد فاتح

سلطان محمد فاتح یا سلطان محمد الثانی سلطنت عثمانیہ کے ساتویں سلطان تھے جو 1444ء سے 1446ء اور 1451ء سے 1481ء تک سلطنت عثمانیہ کے سلطان رہے۔ انہوں نے محض 21 سال کی عمر میں قسطنطنیہ فتح کرکے عیسائیوں کی بازنطینی سلطنت کا ہمیشہ کے لیے خاتمہ کر دیا۔ ا ...

                                               

مراد اول

مراد اول 1359ء سے 1389ء تک سلطنت عثمانیہ کے حکمران رہے۔ وہ اورخان اول کے صاحبزادے تھے جو بازنطینی شہزادی ہیلن کے بطن سے پیدا ہوئے اور 1359ء میں اپنے والد کے وفات کے بعد تخت نشین ہوئے۔ انہوں نے نو مفتوحہ شہر ادرنہ ایڈریانوپل کو دار الحکومت قرار دے ...

                                               

مراد ثانی

مراد ثانی 1421ء سے 1451ء تک سلطنت عثمانیہ کے سلطان رہے۔ ان کا دور حکومت بلقان اور اناطولیہ میں زبردست جنگوں کا دور تھا جس میں انہوں نے شاندار فتوحات حاصل کیں۔ انہوں نے اپنے والد محمد اول کی وفات پر محض 18 سالہ کی عمر میں تخت سنبھالا۔ ان کو سب سے ...

                                               

معمار سنان پاشا

سنان پاشا یا معمار سنان پاشا عثمانی سلاطین سلیم اول، سلیمان اول، سلیم دوم اور مراد سوم کے دور کے اہم ماہر تعمیرات تھے۔ ادرنہ کی سلیمیہ مسجد اور استنبول کی سلیمانیہ مسجد ان کے فن کا منہ بولتا ثبوت ہیں۔

                                               

کوناک مسجد

یالی مسجد کوناک، ازمیر، ازمیر، ترکی کے احاطہ کوناک میں واقع ہے۔ یہ تاریخی احاطہ ہے جو عثمانی طرز تعمیر پر تعمیر کیا گیا ہے۔ مسجد کے عقب میں ازمیر گھنٹہ گھر واقع ہے۔

                                               

سلجوقی سلطنت

سلجوقی سلطنت 11ویں تا 14ویں صدی عیسوی کے درمیان میں مشرق وسطی اور وسط ایشیا میں قائم ایک مسلم بادشاہت تھی جو نسلا اوغوز ترک تھے۔ مسلم تاریخ میں اسے بہت اہمیت حاصل ہے کیونکہ یہ دولت عباسیہ کے خاتمے کے بعد عالم اسلام کو ایک مرکز پر جمع کرنے والی آخ ...

                                               

خوارزم شاہی سلطنت

خوارزم شاہی سلطنت وسط ایشیا اور ایران کی ایک سنی مسلم بادشاہت تھی جو پہلے سلجوقی سلطنت کے ماتحت تھی اور 11 ویں صدی میں آزاد ہو گئی اور 1220ء میں منگولوں کی جارحیت تک قائم رہی۔ جس وقت خوارزم خاندان ابھرا اس وقت خلافت عباسیہ کا اقتدار زوال کے آخری ...

                                               

رس کی کیسپین مہمات

رُس کی کیسپین مہمات بحیرہ کیسپیئن کے ساحلوں پر 864ء اور 1041ء کے درمیان میں رس کی طرف سے ماے گئے فوجی چھاپے تھے، جن میں آج کل کے ایران، داغستان اور آذربائیجان کے علاقے شامل ہیں۔ ابتدائی طور پر، نویں صدی میں یہ رس وولگا تجارتی راستے میں پوستین، شہ ...

                                               

خاندان میروونجئین

خاندان میروونجئین یا میغووانژیاں ایک سالی فرینک خاندان تھا جس نے فرانکیا پر پانچویں صدی کے وسط سے تقریبا 300 سال حکومت کی۔

                                               

قاراؤن

لفظ قاراؤن منگولی لفظ کارا سے ماخوذ ہے جس کے معنی ترکیزبان میں سیاہ کے ہیں. پہلے وہ خاقان اعظم کے تابع تھے اور افغانستان میں تومان یا توماچس کی حیثیت سے خدمات انجام دیتے تھے ۔ خاقان اعظم نے غیر چنگیزیجرنیلوں جیسے دایر اور منگودائی سے ان کے قائدین ...

                                               

علویان طبرستان

اموی اور عباسی ادوار میں تبریز کے علوی ، یا سادات فاطمی ، عراق اور حجاز میں سلامتی کے فقدان کی وجہ سے ایران تشریف لائے اور ایران کو اپنی موجودگی کے لئے ایک مناسب جگہ پایا۔ وہ اپنی زندگی میں نیک لوگ تھے لہذا لوگوں ان کا احترام کیا گیا۔ علویوں کی ا ...

                                               

قرون وسطی کی اسلامی دنیا میں سائنس

قرون وسطی کی اسلامی دنیا میں سائنس کو نہ صرف ترقی دی گئی بلکہ عملی طور پر اسے استعمال میں لایا گیا۔ قرون وسطی کے اسلامی عہد زریں میں قرطبہ کی خلافت امویہ، اشبیلیہ کی عبادی سلطنت، دولت سامانیہ، زیاریانی خاندان، فارس کی آل بویہ، ما وراء النہر کا تی ...

                                               

فرنگی

Frangos Φράγκος in یونانی زبان Feringgi مالے زبان میں Ferengi or Faranji کچھ ترکی زبانوں میں Parangiar in تمل زبان Folangji or Fah-lan-ki 佛郎機 and Fulang چینی زبان میں Farang ฝรั่ง تھائی زبان میں Frenk in ترکی زبان Pirang "سنہرے بالوں والا", Pe ...

                                               

جنگ اجنادین

جنگ اجنادین کا فیصلہ کن معرکہ13ھ بمطابق 634ء کو مسلمانوں اور فلسطین کے یونانی مدافعین کے درمیان مقام اجنادین پر کئی جھڑپیں ہوئیں ابتدائی جھڑپوں میں معاویہ بن ابی سفیان تھے اورفیصلہ کن معرکے میں قیصر روم کا بھائی تھیوڈس یا ارطبون یونانی سپہ سالار ...

                                               

سيف الدين اينال

الملک الاشرف سيف الدين ابو النصر اينال الاعلیٰ الزھری عن ناصری الجرود مصر کے 13 واں برجی مملوک سلطان تھے، جنہوں نے 1453ء–1461ء کے درمیان حکمرانی کی۔

                                               

برٹین میں اینگلو-سیکسن آبادکاری

برطانیہ میں اینگلو سکسون آبادکاری ایک عمل ہے جس میں موجودہ انگلینڈ کی زبان اور ثقافت بدل گئی اور وہ رومانو برطانیہ سے جرمینک ہو گيا۔ برطانیہ میں جرمن بولنے والے ، خود مختلف متنوع ، نے آخر کار اینگلو سیکسن کی حیثیت سے ایک مشترکہ ثقافتی شناخت تیار ...

                                               

جند (انتظامی تقسیم)

ابتدائی خلافت دور کے دوران جند فوجی تقسیم کے لیے ایک اصطلاح تھی جو عرب جدید اسلامی فتوحات کی نوآبادیوں کے لیے استعمال ہوتی تھی، خاص کر سرزمین شام میں نئے صوبے بلاد الشام میں۔

                                               

بیبرس دوم

رکن الدین بیبرس ایک مملوک غلام تھا جے سلطان المظفر الجاشنکیر اور موجودہ تاریخ میں بعض مورخین بیبرس دوم بھی کہتے ہیں- یہ غلامی سے ترقی کرتا ہوا سلطان سیف الدین قلاوون کے دربار تک پہنچا۔ سلطان قلاوون خود بھی مملوک تھا اور بیبرس میں فوجی صلاحتیں بھی ...

                                               

محمد بن ابوبکر

محمد بن ابوبکر کی ولادت 25 ذوالقعدہ 10ھ کوذوالحلیفہ میں ہوئی سنن نسائی میں ان کی ولادت کا ذکر ہے۔ ’’ابوبکر صدیق حجۃ الوداع کے موقع پر رسول کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے ساتھ حج کرنے کے واسطے نکلے ان کے ساتھ ان کی اہلیہ اسماء بنت عمیس بھی تھیں ج ...

                                               

بنو الفونسو

بنو إذفونش یا بنو الفونسو ، یہ بادشاہوں کا ایک خاندان تھا، جھنوں نے استوریس، غاليسية اور لیون پر بادشاہت کی، یہ خاندان الفونسو کیتھولک کے جانشین تھے، جو پیٹر کانتابریا کا بیٹا تھا۔ اگلی صدی کے لیے، بادشاہت الفونسو کے خاندان اور اس کے بھائی فرولا ...

                                               

ارسلان غزنوی

سلطان ارسلان غزنوی اپنے باپ سلطان مسعود غزنوی سوم کے جانشین کے طور پر تخت نشین ہوا۔ اس کا دور حکومت انتشار کا شکار رہا۔ آخر کار اپنے بھائی بہرام شاہ غزنوی کے ہاتھوں قتل ہو گیا تھا۔

                                               

اسلامی حکمرانی کے تحت ممبئی کی تاریخ

1348 سے 1391 تک ، جزیرے مظفری خاندان کے تحت تھے۔ سنہ 1391 میں ، گجرات سلطنت کے قیام کے فوراً بعد ، مظفر شاہ اول کو شمالی کونکن کا وائسرائے مقرر کیا گیا۔ بمبئی جزیروں کی انتظامیہ کے لئے ، اس نے ماہم کے لئے جلد ہی ایک گورنر مقرر کیا۔ احمد شاہ اول 1 ...

                                               

بہرام شاہ غزنوی

بہرام شاہ کی پیدائش 1084ء میں غزنی میں ہوئی۔ بہرام شاہ کے والد سلطان مسعود ثالث غزنوی تھے جبکہ والدہ گوہر خاتون تھیں جو سلجوقی سلطان احمد سنجر متوفی 8 مئی 1157ء کی بہن تھیں۔

                                               

خسرو شاہ غزنوی

علاؤ الدین جہاں سوز کی غزنی و غور سے واپسی کے بعد خسرو شاہ نے اپنے آبائی ملک کو اپنے قبضہ میں کرنے کا اِرادہ کیا اور سلطان احمد سنجر سے مدد ملنے کی توقع پر وہ لاہور سے غزنی کی طرف روانہ ہو گیا۔ بدقسمتی سے اُسی زمانے میں ترکوں نے سلطان احمد سنجر ک ...

                                               

رنچن

صدرالدین شاہ ، جو رنچن کے نام سے بھی جانا جاتا ہے ، کشمیر کا پہلا مسلم حکمران تھا۔ انہوں نے 1320 سے 1323 تک کشمیر پر حکمرانی کی اور وہ کشمیر میں اسلام کے قیام میں معاون رہے۔ وہ براہ راست بلبل شاہ کے زیر اثر تھے۔ وہ اپنے ناموں کے مختلف ورژن سے جان ...

                                               

سید احمد بریلوی

سید احمد بریلوی کی پیدائش بھارت کے صوبہ اترپردیش کے ضلع رائے بریلی کے ایک قصبہ دائرہ شاہ علم اللہ میں ہوئی۔یہ وہ زمانہ تھا جب پورے ہندوستان پر انگریزوں کی حکومت قائم ہو چکی تھی مگر پنجاب اور پختون خواہ کے علاقوں میں سکھوں کا دور چل رہا تھا۔ آپ کا ...

                                               

شاہ میر

شمس الدین شاہ میر برصغیر پاک و ہند کے خطہ کشمیر کا ایک حکمران اور شاہ میر خاندان کا بانی تھا ، جس کا نام ان کے نام پر رکھا گیا ہے۔ خیال کیا جاتا ہے کہ شاہ میر سوہیدیو کے دور حکومت میں کشمیر آئے تھے ، جہاں وہ نمایاں ہوا۔ سوہدیوا اور اس کے بھائی اد ...

                                               

قرون وسطی کا ہندوستان

کام جاری قرونِ وسطیٰ کا ہندوستان سے مراد برصغیر کی تاریخ کا وہ دَور ہے جو 500ء سے 1500ء تک محیط ہے یا آسان مفہوم میں یہ کہا جا سکتا ہے کہ قدیم ہندوستان سے پندرہویں صدی عیسوی کے اختتام تک قرونِ وسطیٰ کا ہندوستان کا دَور کہلاتا ہے۔ موجودہ برصغیر جو ...

                                               

محمد غزنوی

سلطان محمود غزنوی کے تین بیٹے محمد غزنوی ، مسعود غزنوی اور عبد الرشید غزنوی تھے۔ سلطان کا سب سے بڑا بیٹا محمد غزنوی تھا اس لیے اس نے مرتے وقت بڑے بیٹے کو سلطان بنانے کی وصیت کی تھی۔ مسعود غزنوی فوج میں مقبول تھا اس لیے اس نے 1030ء میں ہی بھائی کو ...

                                               

مودود غزنوی

ابو الفتح قطب الملتہ شہاب الدولہ سلطان مودود غزنوی 1040ء میں تخت نشین ہوئے۔ مودود سلطان مسعود کے بڑے صاحبزادے تھے۔ انہوں نے اپنے چچا امیر محمد غزنوی سے جنگ میں فتح حاصل کر کے ہندوستان کی بادشاہت حاصل کی۔ اس کے بعد سلطان اور اس کے بھائی مجدود غزنو ...

                                               

نیا قلعہ

نیا قلعہ گولکنڈا فورٹ حیدرآباد ، بھارت کی ایک توسیع حصہ ہے. اسے سلطان عبد اللہ قطب شاہ نے 1656 میں مغل فوجوں کے مزید دفاع کے طور پر تعمیر کیا تھا۔ گولکنڈہ قلعے کا یہ لازمی حصہ بہت ساری تاریخی ڈھانچوں پر مشتمل ہے۔ نوائے قلعے کے سامنے بیرونی قلعے ک ...

                                               

ٹوڈرمل

22 صوبوں کا دیوانِ کُل اور وزیر باتدبیر تھے۔ بیوہ ماں کی دُعاؤں سے اعلیٰ رُتبہ پایا۔ سپاہ گیری اور سرداری کے جوہر نے بھی اُنکی اہمیت اُجاگرکی۔ پابندی ِآئین احکام میں کسی کو رعایت نہیں دیتے تھے لہذا اُن پر سخت مزاجی کا الزام تھا۔ انتہائی قابل، معا ...

                                               

پشاور کی لڑائی (1001)

پشاور کی لڑائی 27 نومبر 1001 کو سلطان محمود بن سیبکتیگین کی غزنوی فوج اور جئے پال کی ہندو شاہی فوج کے مابین پشاور کے قریب لڑی گئی۔ جے پال ہار گیا اور قیدی بنا لیا گیا اور شکست کی ذلت کے نتیجے کے طور پر، بعد میں اس نے چتا میں جل کر خود سوزی کر لی. ...

                                               

پیر روشان

بایزید خان ، جن کو پیر روشان یا پیر روخان کے نام سے جانا جاتا ہے، پشتون جنگجو، شاعر اور دانشور تھے۔ ان کا تعلق باراک/اورمڑ قبیلے سے تھا۔ ان کی مادری زبان پشتو تھی۔ آپ کی پیدائش پنجاب کے علاقے جالندھر میں ہوئی مگر آپ کے والدین ان کے بچپن میں جنوبی ...

                                               

چچ کی لڑائی

چچ کی لڑائی ، سلطان محمود بن سیبکتیگین کی غزنوی فوج اور میرپور کے قریب آنندپال کی ہندو شاہی فوج کے مابین 1008ء میں لڑی گئی ، جس کے نتیجے میں اس کی شکست ہوئی۔ اس نے شمالی ہندوستان کے خطے کو مزید حملوں کا شکار کر دیا۔

                                               

یاقوت تیموری

یاقوت تیموری کا مقام دریافت معلوم نہیں ہو سکا، البتہ یہ معلوم ہو سکا ہے کہ یہ غالباً تیرہویں صدی عیسوی کے نصف اول کے بعد دریافت ہوا ہوگا کیونکہ یہ یاقوت امیر تیمور کے شاہی جواہرات میں شامل تھا۔ امیر تیمور کے بعد یہ مغل حکمرانوں سے ہوتا ہوا جلال ا ...

                                               

ابو غوش

ابو غوش ، عبرانی: אבו גוש ‎‎) اسرائیل میں ایک عرب اسرائیلی لوکل کونسل ہے۔ یہ کونسل یروشلم کے مغرب میں 10 کلومیٹر کے فاصلے پر واقع ہے۔ یہ کونسل سطح سمندر سے 610–720 میٹر بلندی پر واقع ہے۔ اس کونسل کا موجودہ نام اسی قبیلے کے نام پر رکھا گیا ہے، جبک ...

                                               

انکونا

انکونا اٹلی کے علاقہ مارچے میں واقع ایک بندرگاہ ہے جس کی آبادی 2005ء کی مردم شماری کے مطابق 101.909 تھی۔ انکونا بحیرہ آڈریاٹک کے ساحل پر واقع ہے جو صوبہ انکونا کا مرکز اور اطالوی علاقہ مارچے کا صدر مقام ہے۔

                                               

بولونیا

بلونیا شمالی اطالوی علاقہ ایمیلیا رومانیا کا صدر مقام ہے، جو دریائے پوہ اور آپینین کی پہاڑیوں کے درمیان دریائے رینو اور دریائے ساوینا کے درمیان واقع ہے۔ یہاں دنیا کے قدیم ترین جامعات میں سے ایک جامعہ بولونیا واقع ہے، جو 1088ء میں تعمیر کی گئي تھی ...

                                               

تاریخ روم

روم کے ابتدائی حالات جس مقام پر شہر روم کی بنیاد پڑی تھی اور جو خطہ ملک و قوم روم کا ابتدائی جولانگاہ تھ ااس کے متعلق کسی شک و شبہ کی کنجائش نہیں اطالیہ کے مغربی ساحل پر شمال میں سبوٹیا و یچیا کیلے سے جنوب میں ٹراسینا تک ایک میدان ہے جو صدیوں سے ...

                                               

پارما

پارما شمالی اٹلی کے علاقہ ایمیلیا رومانیا کا صوبہ ہے جو اپنے اعلی معیار کے فن تعمیر اور زرخیز مضافاتی علاقہ کی وجہ سے شہرت رکھتا ہے۔ یہ شہراطالیہ کی قدیم ترین جامعات میں سے ایک جامعہ پارما کا ٹھکانا ہے۔ پارما نام کی ہی پتلی سے ندی شہر کو دو حصوں ...

                                               

پیاچنزا

پیاچنزا شمالی اٹلی کے علاقہ ایمیلیا رومانیا کا ایک شہر ہے جو پیاچنزا صوبہ کا صدر مقام بھی ہے۔ شہر دریائے پوہ کے دائین کنارے پر واقع ہے۔

                                               

کورمائر

کورمائر شمالی اٹلی کے نیم خود مختار علاقہ وادی آوستہ میں واقع ایک شہر ہے، جہاں فرانسیسی زبان بولی جاتی ہے۔ شہر علاقہ میں واقع شمالی یورپ کی بلند ترین چوٹی مونٹ بلانک کے دامن میں واقع ہے، جہاں سے دورا بالتیا نکلتا ہے۔ خوبصورت پہاڑی مقامات اور آب و ...

                                               

مانچسٹر

مانچسٹر ایک شہر اور میٹروپالیٹن برو ہے جو گریٹر مانچسٹر، انگلستان میں واقع ہے اور اس کی آبادی اندازہً 5 لاکھ 3 ہزار ہے۔ مانچسٹر برطانیہ کے سب سے تیسرا بڑا شہری علاقے میں واقع ہے، گریٹر مانچسٹر شہری علاقہ، جس کی آبادی 22 لاکھ ہے۔ مانچسٹر کے باشندو ...

                                               

جنتور

جنتور Jintur صوبہ مہاراشٹر کے ضلع پربھنی کا ایک تعلقہ ہے۔ جنتور شہر ایک تاریخی شہر ہے، اس شہر میں متعدد قدیم مساجد اور مندر واقع ہیں، یہ شہر پہاڑوں کے دامن میں آباد ہے۔ اس صفحے میں مناسب زمرہ بندی کی ضرورت ہے۔بہتر ہے کہ اگر اس صفحے کا انگریزی صفح ...

                                               

جون پور

شمالی ہند کا تاریخی شہر ہے جو ریاست اتر پردیش میں واقع ہے۔ سلطان فیروز شاہ تغلق نے تعمیر کرایا۔ جونا خان نے جو بعد میں السلطان المجاہد ابوالفتح محمد شاہ کا لقب اختیار کر کے سریر آرائے سلطنت ہوا۔ اپنے نام پر اس کا نام جون پور رکھا۔ سلطنتِ تغلق کے ...

                                               

شملہ

شملہ جو پہلے سملہ کہلاتا تھا، بھارت کی ریاست ہماچل پردیش کا دار الحکومت ہے۔ انگریزوں کے زمانے میں یہ برطانوی ہند کا گرمائی دار الحکومت تھا۔ یہ ایک خوبصورت پہاڑی علاقہ ہے اور بھارت میں سیاحوں میں بہت مقبول ہے۔1864ء میں انگریزوں نے مری کو تبدیل کر ...