ⓘ Free online encyclopedia. Did you know? page 520




                                               

محمد سرفراز خان صفدر

مولانا محمد سرفراز خان صفدر ایک بلند پایہ عالم دین مصنف ، خطیب اور مدرس تھے۔آپ امام اہل سنت کے لقب سے جانے جاتے تھے۔ قرآن و حدیث ، فقہ و تصوف اور جملہ علوم اسلامیہ میں آپ کو دسترس حاصل تھی۔آپ کا شمار کثیر التصانیف علمائے دیوبند میں ہوتا ہے۔

                                               

محمد شریف کوٹلوی

نام محمد شریف۔ کنیت: ابویوسف۔ لقب:"فقیہِ اعظم" اعلیٰ حضرت امامِ احمد رضا نے دیا۔ والدگرامی مولانا عبد الرحمن نقشبندی،جو ایک متبحر عالمِ دین تھے۔ ان کے علم وفضل کاشہرہ پورے ہندوستان میں تھا۔ ان کی والدہ محترمہ بھی ایک عابدہ زاہدہ خاتون تھیں۔

                                               

محمد عبد السلام جبل پوری

اسمِ گرامی مفتی شاہ محمد عبدالسلام جبل پوری۔لقب:عیدالاسلام،جامع الفضائل،قطبِ وقت۔ سلسلہ ٔنسب اس طرح ہے: عیدالاسلام بن شاہ محمد عبد الکریم بن شاہ محمد عبدالرحمن بن شاہ محمد عبدالرحیم بن شاہ محمد عبد اللہ بن شاہ محمد فتح بن شاہ محمد ناصر بن شاہ محم ...

                                               

مفتی زین العابدین

مفتی زین العابدین ایک پاکستانی اسلامی اسکالر, خطیب اور مبلغ تھے. وہ یکم جنوری 1917ء کو میانوالی میں پیدا ہوئے تھے۔ وہ تبلیغی جماعت اور عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت سے وابستہ تھے. انہوں نے دارالعلوم دیوبند اور جامعہ اسلامیہ تعلیم الدین سے تعلیم حاصل ک ...

                                               

منظور احمد چنیوٹی

مولانا منظور احمد چنیوٹی ایک پاکستانی اسلامی اسکالر ، سیاست دان اور مصنف تھے. عالمی تحریک تحفظ ختم نبوت کے سیکرٹری جنرل اور جمعیت العلمائے اسلام کے رہنما۔ مولانا منظور احمد چنیوٹی کی تقریباً ساری زندگی قادیانیو کو غیر مسلم اور مرتد قرار دلوانے می ...

                                               

مولانا محمد علی جالندھری

مولانا محمد علی جالندھری ایک پاکستانی اسلامی اسکالر تھے۔ انہوں نے عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے پہلے جنرل سکریٹری اور تیسرے امیر کی حیثیت سے خدمات انجام دیں۔

                                               

مہاویر سنگھ راٹھور

مہاویر سنگھ راٹھور ، پیدائش: 16 ستمبر، 1904ء - وفات: 17 مئی، 1933ء) ہندوستان کے مشہور انقلابی اور 1930ء کی دہائی کے دوران متحرک تحریک آزادی ہند کے مجاہد تھے۔ انہوں نے اترپردیش میں سوشلسٹ انقلابی تنظیم ہندوستانی ریپبلکن آرمی کی تنظیم میں سرگرم حصہ ...

                                               

نور الحسن راشد کاندھلوی

وہ بکری اور صدیقی سلسلۂ نسب سے تعلق رکھتے ہیں، پورا سلسلۂ نسب یوں ہے: نور الحسن بن افتخار الحسن بن رؤوف الحسن بن مفتی الہٰی بخش بن عوض بن ابو جعفر محمد بن عبد اللہ بن محمد بن عبد اللہ عمویہ بن سعد بن حسین بن قاسم بن نضر بن قاسم بن محمد بن عبد الل ...

                                               

اسباق برائے اطفال

اسباق برائے اطفال یا بچوں کے لیے اسباق چار ابتدائی کتب پر مشتمل ایک سلسلہ ہے جسے 18ویں صدی کی معروف برطانوی شاعرہ اور مضمون نگار اینا لائتیشا باربولڈ نے بچوں کی عمر پیش نظر رکھتے ہوئے تحریر کیا تھا۔ 1778ء اور 1779ء میں شائع ہونے والی ان کتب نے ای ...

                                               

امراؤ جان ادا

اُمراؤ جان ادا مرزا محمد ہادی رسوا کا ایک اردو ناول ہے، اس کی پہلی اشاعت 1899ء میں ہوئی۔ بعض محققین اسے ارد وکا پہلا ناول بھی قرار دیتے ہیں اس ناول کی کہانی فیض آباد سے اغوا شدہ لڑکی امیرن کی ہے، جسے امراؤ جان ادا کے نام سے لکھنؤ میں ایک طوائف کی ...

                                               

تاریخ الاسلام

تاریخ الاسلام یہ علامہ ذہبی کی تاریخ ہے جو بیس جلدوں پر مشتمل ہے۔ اس کا پورا نام تاریخ الاسلام و وفیات المشاہیر و الاعلام ہے۔ اس میں تاریخ کی ترتیب سنین کے اعتبار سے ہے جس میں ذہبی نے حوادث اور وفیات کو جمع کیا ہے پھر اس کے خلاصے بھی لکھے گئے ہیں ...

                                               

تاریخ جہاں کشائی

تاریخ جہاں کشائی یا تاریخ جہاں کشائی جوینی یہ علاء الدین عطا ملک جوینی بن بہاء الدین کی فارسی تصنیف ہے۔ علاء الدین جوینی منگول حکمرانوں خصوصاً ہلاکو خان اور اباقا خان کی طرف سے عراق، عرب اور دیگر صوبوں پر صوبیدار رہا، اس نے یہ تاریخ تین جلدوں میں ...

                                               

تزک بابری

بابر کی سوانح تزک بابری ایک تاریخی دستاویز ہے۔ یہ سولہویں صدی کے وسط ایشیاء اور فارس کے بارے میں معلومات دیتی ہے۔ اس کے ساتھ جدید دور کے افغانستان، بھارت اور پاکستان میں شامل علاقوں کے بارے میں بھی کئی بامعنی باتیں بتاتی ہے۔

                                               

حدائق بخشش

حدائق بخشش امام احمد رضا خان کا نعتیہ دیوان ہے جو تین حصوں پر مشتمل ہے۔ اس کا پہلا حصہ 1325ھ بمطابق 1907ء میں مرتب ہوا۔ اب تک کی تحقیق کے مطابق پہلے دونوں حصوں کی اشاعت پہلی بار 1926ء میں ہوئی۔ اس مجموعے میں اردو کے علاوہ کچھ کلام فارسی اور عربی ...

                                               

دی انہیریٹنس آف لاس

دی انہیریٹنس آف لاس ہندوستان میں پیدا ہونے والی مشہور مصنفہ کرن ڈیسائی کا شہرہ آفاق ناول۔ 2006ء میں پہلی دفعہ شائع ہوا۔ مصنفہ کو اس ناول کی بدولت مین بکر پرائز سے نوازا گیا۔ اس کتاب کے بارے میں خود مصنفہ کا کہنا ہے کہ یہ کتاب میں نے اپنے والدین، ...

                                               

ذوق نعت (کتاب)

ذوق نعت حسن رضا خان کی نعتیہ شاعری کا مجموعہ ہے۔ اس کا نام تاریخی ہے، جس سے 1326ھ کا عدد نکلتا ہے، جس سال یہ شائع ہوئی۔ حسن رضا خان کے وصال کے بعد حکیم حسین رضا خان کی سعی و اہتمام سے یہ کلام طبع ہوا۔ اس میں حمد، نعت، مناقب صحابہ و اولیأ، ذکر شہا ...

                                               

سائنسی دریافت کی منطق (کتاب)

سائنسی دریافت کی منطق فلسفۂ سائنس پر کارل پاپر کی کتاب ہے۔ 1934ء میں پہلے کارل پاپر نے یہ کتاب جرمن زبان میں شائع کرائی، پھر یہی کتاب خود اس نے 1959ء میں انگریزی زبان میں پیش کی۔ یہ اس کی مشہور ترین کتاب ہے۔

                                               

ماں (میکسم گورکی)

ماں ایک ناول ہے جو میکسم گورکی نے 1906ء میں ایک انقلابی فیکٹری مزدور سے متعلق لکھا۔ اس کا ترجمہ بہت سی زبانوں میں ہوا ہے اور کئی فلمیں اس کی کہانی پر بن چکی ہیں۔ جرمنی کے ناٹک نگار برتولت بریخت اور اس کے ساتھیوں نے 1932ء میں ناٹک ماں کیا تھا وہ ا ...

                                               

معذرت (افلاطون)

معذرت یا سقراط کا دفاع ، افلاطون کی طرف سے، سقراطی مکالمہ ہے جو، سقراط کی قانونی دفاع کے لیے اپنے مقدمے پر تقریر ہے، جو 399 قبل مسیح میں کی گئی۔ بالخصوص، سقراط کی معذرت اس پر لگے الزامات نوجوان کو خراب کرنا اور ان دیوتاؤں کو نہیں مانتا جن کو شہری ...

                                               

کانٹوں کی کھیتی (ناول)

کانٹوں کی کھیتی میں شینان احمد کا ناول ہے۔ ناول کا ترجمہ دنیا کی کئی زبانوں میں ہوچکا ہے۔ ناول میں ملائشیا کے بدلتے ہوئے معاشرے کی کہانی پیش کی گئی ہے۔ ناول کسانوں کی زرعی سرگرمیوں جو مسلسل اور مایوس کن رویوں پر مشتمل ہیں، ان کا بیان کرتا ہے۔ شین ...

                                               

اسٹوبارٹ ایئر

اسٹوبارٹ ایئر جمہوریہ آئرلینڈ کی ایک علاقائی ایئرلائن ہے جو ایر آران کے نام کے تحت کاروبار کرتی ہے اور اس کا صدر دفتر ڈبلن میں واقع ہے۔

                                               

اعتماد الدولہ قمر الدین خاں

اعتماد الدولہ قمر الدین خاں – میر محمد فاضل وفات: 21 مارچ ء مغلیہ سلطنت کا صدرِ اعظم تھا جس کا تعلق ترک مغل اشرافیہ سے تھا۔اعتماد الدولہ کا والد محمد امین خاں تورانی بھی مغلیہ سلطنت کا صدرِ اعظم تھا۔

                                               

مبارک خواجہ

مبارک خواجہ 1320-1344 کے درمیان اردوئے ایبض کا خان تھا۔ اس نے اپنے بھائی الباسان کی جگہ اقتدار سمبھالنے میں اردوئے زریں کے خان اوزبیگ خان اور باتو خان کے خاندان کی مدد سے کامیابی حاصل کی۔ تاہم اس نے سرائے سے اپنی آزادی کا اعلان کیا۔ خان نے اپنے ب ...

                                               

مسعود غزنوی سوم

سلطان ابراہیم غزنوی نے سلجوقیوں کے ساتھ صلح کر لی تا کہ مذید جنگ نہ ہو۔ اس صلح کو پائیدار بنانے کے لیے سلطان نے اپنے بیٹے مسعود غزنوی کی شادی ملک شاہ اول سلجوقی کی بیٹی اور ملک احمد منجر کی بہن مہو عراق کے ساتھ کروا دی تھی۔ اس سے سلطان مسعود غزنو ...

                                               

آرام شاہ

قطب الدین ایبک کا بیٹا جو اس کے مرنے کے بعد 1210ء میں تخت سلطنت پر بیٹھا۔ نااہل اور آرام طلب تھا اس لیے سلطنت کا انتظام نہ سنبھال سکا۔ لاہور کے علاوہ دوسرے ترک سرداروں نے بھی اسے بادشاہ تسلیم کرنے سے انکار کر دیا۔ دہلی کے ترکوں نے شمس الدین التمش ...

                                               

ابراہیم غزنوی

سلطان ابراہیم غزنوی بڑا متقی اور پرہیزگار انسان تھا۔ ہر سال اپنے ہاتھ سے قرآن پاک لکھ کر مکعہ مکرمہ بھیجتا تھا۔ سلطان نے سلجوقیوں سے صلح کر لی تھی اس لیے ہندوستان کے بعض اہم علاقے فتح کرنے میں کامیاب رہا۔ سلطان ابراہیم بیالیس سال تک حکمران رہے کر ...

                                               

ابو جعفر مسعود غزنوی

سلطان ابو جعفر مسعود غزنوی وہ حکمران ہے جس کی تخت نشینی چار سال کی کم عمر میں کی گئی جس وجہ سے ساتھ دن، دس دن اور ایک روایت کے مطابق ایک ماہ سلطان رہے۔ اس کے بعد آپ کو معزول یا دستبردار کر دیا گیا۔ سلطان مودود غزنوی کے آپ واحد بیٹے ہیں جو سلطان بنے۔

                                               

ابوالحسن علی غزنوی

ابو الحسن علی غزنوی سلطنت غزنویہ کے دسویں سلطان تھے۔ یہ سلطان مسعود غزنوی کے بیٹے تھے۔ ان کی مدت حکومت دو سال ہے۔ ان کا اقتدار ان کے چچا عبد الرشید نے ختم کیا تھا جس کے بعد وہ خود سلطان بن گیا تھا۔

                                               

اسمعیل غزنوی

امیر اسماعیل غزنوی 387ھ بمطابق 997ء کو بمقام بلغ تخت نشین ہوا۔ اس کو جانشین خود والد امیر ناصر الدین سبکتگین نے کیا تھا۔ سلطنت کے سلسلے میں امیر اسمعیل اور سلطان محمود غزنوی کے درمیان جنگ ہوئی جس میں محمود کامیاب رہا۔ جس وجہ سے امیر اسمعیل کو باق ...

                                               

المتوکل علی اللہ

ابوجعفر المتوکل علی اللہ خلافت عباسیہ کا دسواں خلیفہ تھا جس نے 847ء سے 861ء تک حکومت کی۔ متوکل عباسی ، ابو الفضل جعفر ابن معتصم 206-247 ہجری ، دسواں عباسی خلیفہ اور علی ابن ابی طالب ع کے اہل خانہ کا سخت ترین دشمن تھا ۔ اس نے 15 سال حکومت کی۔ ہر و ...

                                               

اچھر سنگھ جتھیدار

اچھر سنگھ جتھیدار کا جم سردار حکم سنگھ کے گھر لاہور ضلعے کے گاؤں پنڈ گھنیئے میں ہوا تھا۔ 15 برس کی عمر میں برما چلے گئے۔ اچھر نے برما جا کے برمی اور اردو کی تعلیم حاصل کی۔ اور پھر اس کے برما کی ملٹری پولیس میں بھرتی ہو گئے۔ 1921ء تکّ مختلف مقامات ...

                                               

بیدار بخت محمود شاہ بہادر

بیدار بخت محمود شاہ بہادر ایک غاصب مغل شہنشاہ تھا جسے غلام قادر روہیلہ نے شاہ عالم ثانی کو معزول کرنے کے بعد ناصرالدین محمد کوچک جہاں شاہ پادشاہ غازی کے لقب سے تخت نشیں کروایا۔ محمود شاہ محض دو مہینے ہی برسر تخت رہا کہ مرہٹوں نے اُس کی حکومت کا خ ...

                                               

بیگہ بیگم

بیگہ بیگم - حاجی بیگم پیدائش: 1511ء - وفات: 17 جنوری 1582ء مغلیہ سلطنت کے دوسرے بادشاہ ہمایوں کی بیوی اور مغلیہ سلطنت کی ملکہ تھیں۔ اُنہوں نے ہمایوں کی دو بار کی حکومت میں بطور ملکہ حکمرانی کی۔ حج کی ادائیگی کے بعد سے اُنہیں حاجی بیگم کے نام سے ب ...

                                               

راجا بھارا مل

راجا بھارا مَل یا راجا بِہارِی مَل ، بِہار مَل ، بَھرمَل ، بھاگ مَل ریاست آمیر کا راجا تھا جسے آج جے پور کہا جاتا ہے۔ راجا بھارا مل کی وجہ شہرت اُس کی بیٹی مریم الزمانی المعروف بہ جودھا بائی ہے جس کی شادی مغل شہنشاہ جلال الدین اکبر سے ہوئی تھی۔ ا ...

                                               

رکن الدین فیروز

رکن الدین فیروز سلطنت دہلی کے خاندان غلاماں کا چوتھا بادشاہ تھا جس نے صرف 7 ماہ حکومت کی۔ وہ شمس الدین التمش کا بیٹا تھا۔ اپریل 1236ء میں التمش کے انتقال کے بعد وہ تخت پر بیٹھا لیکن اسے تخت کے لائق نہیں سمجھا جاتا تھا اس لیے نومبر 1236ء میں مارا ...

                                               

طغرل حاجب

طغرل حاجب ایک سپاہی تھا اور سیستان کی طرف بھیجے جانے والے لشکر کا سپہ سلار تھا۔ جب اس نے سلطنت غزنویہ کے حکمران کو کمزور پایا تو غزنی پر حملہ کر کے اس پر قبضہ کر لیا اور خود سلطان بن گیا۔

                                               

فرخ زاد غزنوی

سلطان فرخ زاد کا دور انتہائی پرامن رہا۔ وہ 1052ء سے 1058ء تک سلطان رہا۔ اس نے 1058ء میں طبعی وفات پائی۔ اس کا جانشین اس کے چھوٹے بھائی ابراہیم غزنوی کو بنایا گیا۔

                                               

قیس بن سعد

قیس نام، ابو الفضل کنیت، خاندان ساعدہ قبیلہ خزرج اور سعد بن عبادہ سردار خزرج کے فرزند ارجمند ہیں، سلسلۂ نسب ،قیس بن سعد بن عبادہ بن ولیم بن حارثہ بن حزام بن خزیمہ بن ثعلبہ بن طریف بن خزرج بن ساعدہ بن کعب بن خزرج اکب رہے، والدۂ ماجدہ کا نام فکیہ ب ...

                                               

محمد شاہ (سید خاندان)

مبارک شاہ سید خاندان کے قتل کے بعد سرور الملک نے اُسی روز محمد شاہ کو سلطان سلنت دہلی مقرر کر دیا تھا اور اُسی روز اُس کی تخت نشینی عمل میں آئی۔ سابقہ سلطان مبارک شاہ سید خاندان کا قاتل سرور الملک وزیر تھا جس کا خیال تھا کہ وہ نوجوان محمد شاہ کو ...

                                               

مرزا محمد خان اول

اس کے آباؤ اجداد یعنی ان کے دادا محمد محسن بیک اور دادا ہیبت بیک 1592ء میں ایران سے باکو پہنچے اور مختلف کمانڈنگ عہدوں پر فائز رہے۔ ان کے والد درگاہ قلی بیک میں مثہدی آقا شہر کا زمیندار تھا جس نے شہر پر قبضہ کر کے صفوی سلطان کی مامور سلطان کو قتل ...

                                               

معز الدین بہرام شاہ

معز الدین بہرام قرون وسطیٰ میں ہندوستان کی سلطنت دہلی کا چھٹا سلطان تھا جو خاندان غلاماں سے تعلق رکھتا ہے۔ وہ شمس الدین التمش کا بیٹا اور رضیہ سلطانہ کا بھائی تھا۔ جب رضیہ بھٹنڈہ میں مقیم تھی تو بہرام نے اپنی بادشاہت کا اعلان کر دیا۔ امرائے چہلگا ...

                                               

موسیٰ الہادی

ابو محمد موسیٰ الہادی العباسی خلافت عباسیہ کا چوتھا حکمران اور خلیفہ اسلام تھا۔ابوموسیٰ الہادی نے محض ایک سال حکمرانی کی۔

                                               

ایلس کیٹیلر

ڈیم ایلس کیٹیلر آئرلینڈ کی وہ پہلی عورت تھی جسے چڑیل قرار دیا گیا۔ موقع پا کر وہ ملک سے فرار ہو گئی مگر اس کی ملازمہ پیٹرولینا ڈی میتھ کو دھر لیا گیا اور اس پر تشدد کرنے کے بعد 3 نومبر 1324ء کو زندہ جلا دیا گیا تھا۔

                                               

رامن راگھو

رامن راگھو ساٹھ کی دہائی میں ممبئی کا ایک بدنام زمانہ قاتل تھا۔ اس کے ساتھ ہی وہ نفسیاتی مریض بھی تھا۔ اس نے 41 کے قریب لوگوں کے قتل کیے تھے جن میں عورتیں اور بچے بھی شامل تھے۔ اس کے ذہنی مریض ہونے کی وجہ اسے سزائے موت سے راحت ملی۔

                                               

میلن میٹس ڈوٹر

میلن میٹس ڈوٹر فننش نسب کی سویڈش بیوہ عورت تھی جس پر چڑیل ہونے کا الزام اس کی اپنی بیٹیوں نے عائد کیا تھا۔ اس پر جادوگری، شیاطین سے تعلقات اور بچے چرانے کا الزام تھا۔ اس عورت نے اپنی ہی بیٹیوں کے بچوں یعنی اپنے نواسوں کو بھی نہ بخشا تھا، میلن نے ...

                                               

نتھو رام گوڈسے

نتھو رام گوڈسے مشہور بھارتی رہنما گاندھی کا قاتل تھا۔ نتھورام گوڈسے نے 30 جنوری، 1948 کو موہن داس گاندھی کو قتل کر دیا تھا، بھارتی عدالت میں انتہاپسند گوڈسے نے بیان دیا تھا کہ موہن داس گاندھی نے قیام پاکستان کی حمایت کی، اسی لیے اس نے قتل کر دیا۔ ...

                                               

ٹھگ بہرام

ٹھگ بہرام یا بہرام اٹھارہویں صدی عیسوی کے نصفِ آخر سے اُنیسویں صدی عیسوی کے اوائل چار عشروں تک وہ ٹھگیوں کے سربراہ کی حیثیت سے ہندوستان میں مشہور تھا۔ ٹھگی دراصل وہ قاتل تھے جو اواخر اٹھارہویں صدی عیسوی سے اُنیسویں صدی عیسوی تک مرکزی ہندوستان میں ...

                                               

آذر بیگدلی

آذر بیگدلی یا حاجی لطف علی اصفہانی فارسی النسل مصنف اور تذکرہ نگار تھے۔ اُن کی وجہ فارسی ادب میں اُن کے تحریر کردہ فارسی زبان کے شعرا کے تذکرہ یعنی ’’آتش کدہ‘‘ ہے۔ جس میں اُنہوں نے اٹھارہویں صدی عیسوی تک کے تمام فارسی شعراء کا تذکرہ کیا ہے۔

                                               

آل رضا

آل رضا 10 جون، 1896ء کو قصبہ نبوتنی، اناؤ ضلع، اتر پردیش، برطانوی ہندوستان میں پیدا ہوئے ۔ ان کا بچپن والد کے ہمراہ مختلف شہروں میں گذرا۔ ان کے والد سید محمد رضا 1928 میں اودھ چیف کورٹ کے اولین پانچ ججوں میں شامل تھے۔ آل رضا نے 1916ء میں کنگ کالج ...

                                               

آگہی (ترک شاعر)

آگہی کی پیدائش گیانیتسا میں ہوئی جو اَب یونان کا ایک شہر ہے۔ آگہی کے ابتدائی حالات دستیاب نہیں ہو سکے، البتہ وہ جوانی تک سلطنت عثمانیہ کے مقبوضہ علاقوں میں ہی کسی شہر میں مقیم رہا۔ گیانیتسا جو اُس زمانے میں اہم مقام تھا، میں وہ مدرّس اور قاضی کی ...