ⓘ Free online encyclopedia. Did you know? page 382



                                               

فواد خان

فواد افضل خان ایک پاکستانی اداکار اور گلوکار ہیں۔ انہوں نے فلم خدا کے لیے میں شرکت کی۔ وہ Entity Paradigm نامہ راک بینڈ میں گیٹار بجاتے اور گاتے تھے۔ اداکار کے مشہور ڈراموں میں ہم سفر اور زندگی گلزار ہے قابلِ ذكر ہیں۔ ان کی عام رہائش لاہور میں ہو ...

                                               

قوی خان

محمد قوی خان 15 نومبر، 1932ء کو،پشاور برطانوی ہندوستان موجودہ پاکستان میں پیدا ہوئے۔ انہوں نے فنی زندگی کا آغاز ریڈیو پاکستان سے کیا۔ 1964ء میں جب لاہور میں پاکستان ٹیلی وژن کا آغاز ہوا تو انہیں اس کے پہلے ڈرامے میں کام کرنے کا اعزاز حاصل ہوا۔ اس ...

                                               

لہری

معروف پاکستانی مزاحیہ اداکار۔ اصل نام سفیر اللہ صدیقی، 2جنوری 1929 میں پیدا ہوئے۔ اپنے فلمی کیریئر کا آغاز پچاس کی دہائی میں بلیک اینڈ وائٹ فلموں سے کیا۔ منور ظریف، نذر اور آصف جاہ کے بعد لہری کے لیے فلم انڈسٹری میں اپنے لیے جگہ بنانا کسی معرکے س ...

                                               

محمد علی (اداکار)

معروف اداکار محمد علی جنہیں شہنشاہ جذبات کے لقب سے بھی یاد کیا جاتا ہے۔ پاکستان فلم انڈسٹری کے سنہرے دور کی جب بھی تاریخ لکھی جائے گی تو شہنشاہ جذبات محمد علی کا نام سنہرے حروف میں لکھا جائے گا۔ محمد علی ایک بہت بڑے فنکار اور عظیم انسان تھے۔ انہو ...

                                               

معین اختر

معین اختر پاکستان ٹیلیوژن، اسٹیج اور فلم کے ایک مزاحیہ اداکار اور میزبان ہیں۔ اس کے علاوہ وہ بطور فلم ہدایت کار، پروڈیوسر، گلوکار اور مصنف کام کر چکے ہیں۔

                                               

مہ نور بلوچ

مہ نور بلوچ ایک امریکہ میں پیدا ہوئی پاکستانی اداکارہ ہیں جو زیادہ تر ٹی وی ڈراموں میں کام کرتی ہیں۔ وہ ماڈلنگ بھی کرتی رہیں ہیں اور فلم کی ہدایت کاری بھی کر چکی ہیں۔ ماہ نور بلوچ نے پی ٹی وی ڈرامہ سیریل "ماروی" سے 1993 میں آغاز کیا۔ وہ اکثر اپنی ...

                                               

وحید مراد

وحید مراد ایک نامور پاکستانی فلم اداکار، پروڈیوسر اور سکرپٹ رایٹر تھے۔ وحیدمراد جنوبی ایشیا کے سب سے زیادہ مشہور اور بااثر اداکاروں میں سے ایک سمجھے جاتے ہیں۔ وحید مراد کراچی میں پیدا ہؤے تھے۔ وہ فلم تقسیم کار نثار مراد کے اکلوتے بیٹے تھے۔ وحید م ...

                                               

وحید مراد پر فلمائے گئے گانے

وحید مراد پر 250 سے زیادہ اردو اور پنجابی گانے فلمائے گئے، اس میں وحید مراد کا اپنا گایا ہوا گانا جیسے تسے بیت گیا دن فلم اشارہ کے لیے بھی شامل ہے۔ احمد رشدی، مہدی حسن، مسعود رانا، اے نیئر، مجیب عالم، اسد امانت علی خان، غلام عباس، رجب علی، اخلاق ...

                                               

وحید مراد کی فلمیں

وحید مراد نے بطور اداکار کل 124 فلموں میں کام کیا اور بطور مہمان اداکار 6 فلموں میں کام کیا۔ انہوں نے بطور پروڈیوسر 11 فلموں کو پروڈیوس کیا۔ 1 فلم کی ہدایتکاری اور 4 فلمیں تحریر کیں۔

                                               

1913ء کی بالی ووڈ فلموں کی فہرست

1913ء میں جب ہندی سنیما کا آغاز ہوا اس میں پہلی ریلیز ہونے والی خاموش فلم راجا ہری چندر تھی جو قدیم ہندو داستانوں کے ایک بادشاہ کے بارے میں ’راجا ہریش چندر‘ کے بارے میں تھی۔ یہ خاموش فلم 21 اپریل1913ء کومخصوص طبقہ کے لیے ریلیز ہوئی جبکہ3 مئی 1913 ...

                                               

1914ء کی بالی ووڈ فلموں کی فہرست

1914ء میں بالی ووڈ فلموں پر دادا صاحب بھالکے کی ہی فلمیں نمائش پزید ہوئیں، جن میں ایک فلم ’’ستیہ وان ساوتری ‘‘ اور دو ڈوکیومنٹری فلمیں سین آف ریور گوداوری اور ’’ناسک ترمبک یتھل دکھاوے ‘‘ شامل ہیں۔ ناسک، ترمبک میں دراصل کنبھ کامیلا لگتا ہے۔

                                               

1915ء کی بالی ووڈ فلموں کی فہرست

1915ء میں بالی ووڈ فلموں میں اہم فلمیں ’’گوپال کرشنا ‘‘ ،ڈیتھ آف ناراین راؤ پیشوا، چندراہا، ماولیکا اور پتر لابھ اور دو ڈوکیومنٹری فلمو ں میں سین فرام کھنڈالا گھاٹ، مس ملر کنورژن ٹو ہندو ازم اور تلے گاؤں چا کانچ کارخانہ شامل ہیں۔

                                               

1916ء کی بالی ووڈ فلموں کی فہرست

پی ایل سنتوشی: پیدائش 17 اگست 1916ء، ہندی فلموں کی ہدایت کار اور لکھاری۔ شہنائی، کھڑکی، اپنی چھایا، ہم پنچھی ایک ڈال کے، برسات کی رات نامی ہندی فلمیں لکھیں اور بنائیں۔ للیتا پوار: پیدائش 18 اپریل 1916ء، بالی ووڈ کی معروف اداکارہ، جو عموما ظالم سا ...

                                               

1917ء کی بالی ووڈ فلموں کی فہرست

روشن پیدائش 14 جولائی1917ء، بالی ووڈ کی معروف موسیقار، جو ہدایتکار و پروڈیوسرراکیش روشن، راجیش روشن کے والد اور اداکار ہریتک روشن کے دادا ہیں۔ تاج محل، نورجہاں، ہم لوگ، انہونی، برسات کی رات، مامتا، انوکھی رات، بہو بیگ او بے داغ جیسی فلموں میں موس ...

                                               

1918ء کی بالی ووڈ فلموں کی فہرست

شری کرشنا جنم اس سال کی سب سے مقبول فلم تھی۔ یہ دادا صاحب پھالکے کے فلم اسٹوڈیو ہندوستان سنیما فلم کمپنی کی پہلی فلم تھی۔ یہ فلم ایک سیریز فلم تھی اس فلم کا اگلا سیکوئل کالیہ مردن 1919 میں ریلیز ہوئی۔ دادا صاحب پھالکے کی 7 سالہ بیٹی منداکنی پھالک ...

                                               

1919ء کی بالی ووڈ فلموں کی فہرست

سال 1919 میں ریلیز ہوئی دادا صاحب پھالکے کی فلم کالیا مردن اہم فلم مانی جاتی ہے۔ اس فلم میں دادا پھالکے کی بیٹی منداکنی پھالکے نے کرشنا کا کردار ادا کیا تھا۔ کہتے ہیں کہ لنکا دہن اور کالیا مردن کی نمائش کے دوران جب رام اور کرشن پردے پر آتے تھے تو ...

                                               

1920ء کی بالی ووڈ فلموں کی فہرست

1920ء میں ہی داداصاحب پھالکے کی فلم نل دمینتی ریلیز ہوئی۔ یہ بھی پہلی ایسی ہندوستانی فلم تھی جو بھارت اور اٹلی کی شراکت سے بنی تھی۔ اس فلم کی ایک اور خاص بات یہ تھی کہ اس فلم سے ہندوستانی سنیما کی پہلی سپر اسٹار اداکارہ پیشینس کوپر نے اپنے فلمی ک ...

                                               

1921ء کی بالی ووڈ فلموں کی فہرست

1921ء میں بابو راؤپینٹر کی فلم سریکھا ہرن ریلیز ہوئی۔ فلم کی کہانی مہابھارت کے ایک قصہ پر مبنی ہے۔ شری کرشن کے بڑے بھائی بلرام اور راجا ککدمی کی بیٹی ریواتھی کی شادی کے نعد ان کی ایک بیٹی ہوئی جس کا نام سریکھا ششی ریکھا/واتسلاتھا۔ جب سریکھ اجوان ...

                                               

1923ء کی بالی ووڈ فلموں کی فہرست

فلم کی کہانی وشنو پُران اور بھگوت پُران میں شری کرشن کے قصہ سے ماخوذ ہے، مہابھارت عہد میں مگدھ کے راجا جراسندھ سے بچنے کے لیے شری کرشن جی سمندر کے درمیان دوارکاسلطنت میں روپوش ہو گئے تھے، اس سلطنت کے ستراجیت کو سیمنتک منی ایک پارس پتھر ملا، شری ک ...

                                               

1924ء کی بالی ووڈ فلموں کی فہرست

پاپ نو فیج ترجمہ:گناہ کا قرض جرم و سزا کے موضوع پر بنی ہندوستان کی پہلی فلم تھی۔ ہالی ووڈ کنونشنوں کو کامیابی سے ترجمہ کرتے ہوئے فلم کو ہدایت کار نول گاندھی اور اردشیر ایرانی نے بنائی۔ فلم کے اداکاروں میں بھگوتی پرساد مشرا، تارا، آسوجی، الیعزر شا ...

                                               

دیوی (2020 فلم)

دیوی ، ہندوستان میں بنی ہندی زبان کی تجسس پر مبنی مختصرفلم ہے جس کی ہدایتکاری پرینکا بینرجی نے کی ہے اور اسے نرنجن آئینگر اور ریان ایوان اسٹیفن نے پروڈیوس کیا ، جن کی پروڈکشن کمپنی الیکٹرک ایپل انٹرٹینمنٹ فلمیں تیار کرتی ہے۔ کاجول اور شروتی ہاسن ...

                                               

شکنتلا (1920ء فلم)

شکنتلا 1920ء کی مقبول ہندی فلم تھی، جس کے ہدایت کار سچیت سنگھ تھے اور۔ سنیماٹوگرافر بیرن فان رائے ون اور رائے واؤگن تھے۔ یہ پہلی ایسی ہندوستانی فلم تھی جس میں پہلی بار ایک بین الاقوامی اداکارہ، امریکی اداکارہ ڈوروتھی کنگڈم نے کام کیا۔

                                               

مانی کارنیکا: جھانسی کی رانی

مانی کارنیکا: جھانسی کی رانی ایک 2019 ہندوستان میں بنی ہندی زبان کی تاریخی فلم ہے جو جھانسی کی رانی لکشمی بائی کی زندگی پر مبنی ہے۔ اس کی ہدایتکاری رادھا کرشنا جگرلامودی اور کنگنا رناوت نے کی، اسکرین پلے کےوی وجندر پرساد نے لکھا ، اور زی اسٹوڈیوز ...

                                               

نل دمینتی (1920ء ہندی فلم)

1920ء میں ہی داداصاحب پھالکے کی فلم نل دمینتی ریلیز ہوئی۔ یہ بھی پہلی ایسی ہندوستانی فلم تھی جو بھارت اور اٹلی کی شراکت سے بنی تھی۔ اس فلم کی ایک اور خاص بات یہ تھی کہ اس فلم سے ہندوستانی سنیما کی پہلی سپر اسٹار اداکارہ پیشینس کوپر نے اپنے فلمی ک ...

                                               

کس دیش میں ہے میرا دل

کس دیش میں ہے میرا دل بھارتی ڈراما ہے جو اسٹار پلس پر نشر ہوتا تھا۔ یہ ڈراما بالاجی ٹیلی فلمز کی ایکتا کپور کی جانب سے بنایا گیا تھا۔ ابتدائی کہانی ہیر اور پریم کے رومانس اور رومیو و جولیٹ کی طرح ان کے لافانی عشق پر مبنی ہے۔

                                               

کان فلم فیسٹیول

کان فیسٹیول یا کان میلہ یا کان تہوار جس کا نام 2002ء تک انٹرنیشنل فلم فیسٹیول تھا جسے عام طور پر کینس فلم فیسٹیول کے نام سے جانا جاتا ہے ایک سالانہ فلمی میلہ ہے جو کان، فرانس میں منعقد ہوتا ہے۔

                                               

دی لارڈ آف دی رنگز

اسی نام کے فلمی سلسلہ کے لیے دیکھیں دی لارڈ آف دی رنگز فلمی سلسلہ دی لارڈ آف دی رنگز جامعہ آکسفورڈ کے پروفیسر جے آر ٹولکین کا تخلیق کردہ ایک فرضی ناول ہے۔ یہ ٹولکین کے بچوں کے لے لکھی گئی ایک گزشتہ کہانی دی ہابٹ کا تسلسل ہے۔ یہ 1937 سے لے کے 1939 ...

                                               

فلم میں 2000ء

The year 2000 in film involved some significant events. سن 2000 میں ریلیز ہونے والی فلموں میں سب سے زیادہ بزنس کرنے والی فلم مشن امپاسبل دو Mission: Impossible II رہی۔ گلیڈی ایٹر نے بہترین فلم کا ایوارڈ حاصل کیا اور رسل کرو نے بہترین اداکار کا ای ...

                                               

بارش (گیت)

بارش ہاف گرل فرینڈ فلم کا ایک ہندی گیت ہے۔ اسے عرفات محمود اور تانشک باگچی نے تحریر کیا ہے ، اور تانشک باگچی نے کمپوز کیا ہے۔ اسے ایش کنگ نے گایا ہے۔

                                               

تیرے سنگ یارا

تیرے سنگ یارا" منوج منتشر کا لکھا ہوا ایک رومانٹک گانا ہے ، جسے ارکو پراوو مکھرجی نے تشکیل دیا ہے ، اور عاطف اسلم نے گایا ہے۔ یہ گانا 2016 کی فلم رستم کے صوتی ٹریک کا ہے۔

                                               

جینا جینا

2015 کی بالی وڈ فلم ”بدلاپور" کا ایک رومانٹک ہندی گانا ہے۔اسے سچن جگر نے کمپوز کیا ، یہ گانا پاکستان کے مشہور بالی وڈ گلوکار عاطف اسلم نے گایا ہے ، جسے دنیش وجن اور پریا سرائے نے لکھا ہے۔ ٹریک کے میوزک ویڈیو میں اداکار ورن دھون ، یمی گوتم اور عاط ...

                                               

میں رنگ شربتوں کا

"میں رنگ شربتوں کا" 2013 کی بالی ووڈ فلم پھٹا پوسٹر نکلا ہیرو کا رومانوی ہندی گیت ہے۔ پریتم چکرابورتی کے تشکیل کردہ اس گیت کو عاطف اسلم اور چنمائی نے گایا ہے ، جس کے لیرکس ارشاد کامل نے لکھے ہیں۔ البم کا ساؤنڈ ٹریک اری جیت سنگھ کے ذریعہ پیش کردہ ...

                                               

نجانے کیوں

نجانے کیوں ایک اردو گیت ہے جو مشہور پاکستانی پاپ میوزک بینڈ سٹرنگز نے گیا۔ یہ گانا مشہور انگریزی فلم سپائڈر مین 2 کے ہندی /اردو ورژن کے لیے منتخب ہوا۔ یہ گیت سٹرنگز کی چوتھی البم "دھانی" میں شامل ہے جو 2003ء میں پیش کی گئی۔

                                               

آساوری

گو آساوری ٹھاٹھ میں رکھب شدھ ہے مگر آساوری راگ میں رکھب کومل استعمال کی جاتی ہے۔ تاکہ وہ جونپوری سے علاحدہ ہو سکے اور وادی سموادی کے فرق سے بھیرویں سے بھی الگ ہو جاتا ہو۔ اس کا مدھم وادی اور رکھب سموادی لیکن بعض گائک مدھم کو وادی اور دھیوت کو سمو ...

                                               

ایمن کلیان

ایمن کلیان یا یمن کلیان راگ کلیان ٹھاٹھ کا سب سے پہلا راگ ہے۔ ایمن کلیان ایک سمپورن راگ ہے جس میں مدہم تیور اور باقی تمام سر شدھ استعمال ہوتے ہیں۔ اس کا وادی سر گندھار اور سموادی نکھاد ہے۔ ایمن کلیان کے گانے کا وقت شام ہے۔

                                               

بسنت (راگ)

راگ بسنت کی آروہی میں پنچم استعمال نہیں ہوتی۔ یہ راگ پوریا دھناسری اور پرج سے ملتا جلتا ہے مگر شدھ مدہم یہ کومل مدہم کے استعمال سے ہی ان دونوں راگوں سے الگ تمیز کیا جا سکتا ہے کیونکہ کومل مدہم کا استعمال ہی بسنت کی پہچان اور اس کی ساخت کا امتیازی ...

                                               

بھوپالی

بھوپالی میں مدھم اور نکھاد ورج ہیں؛ رکھب، گندھار اور دھیوت شدھ استعمال ہوتے ہیں۔ وادی سر گندھار ہے اور سموادی دھیوت ہوتا ہے۔ بعض افراد کے نزدیک وادی پنچھم اور سموادی کھرج، لیکن پہلی ترکیب درست اور زیادہ خوبصورت ہے۔

                                               

بھیرویں

بھیروں ایک سمپورن راگ ہے۔ اس میں مدحم شدھ اور باقی سر کومل استعمال ہوتے ہیں؛ اس کا وادی سر پنچم ہے اور سموادی کھرج ہے۔ بعض لوگ مرہم کو وادی اور کھرج کو مانتے ہیں لیکن اس طرح سندھی بھیروں کا رنگ پیدا ہوتا ہے۔ بھیروں میں شدھ رکھب جھی استعمال کیا جا ...

                                               

بہاگ

بعض گائک اس راگ کو کلیان ٹھاٹھ کا بھی بتاتے ہیں مگر دراصل یہ بلاول ٹھاٹھ کا ہی راگ ہے۔ ویسے تیور مدھم اور تیور نکھاد کے اعتبار سے اس راگ کا کلیان ٹھاٹھ سے اخذ کیے جانے کا بھی گمان ہوتا ہے کیونکہ کلیان ٹھاٹھ کے اکثر و پیشتر راگوں کا وجود انہی دو س ...

                                               

تلک کا مود

تلک کا مود کا تاثر اداسی اور یاسیت ہے۔ اس راگ میں موزوں کی ہیئ ٹھمریاں، غزلیں اور گیت اپنے اندر ہجر و فراق کی ایک تڑپ اور ٹیس لیے ہوئے ہیں، جن کو سنتے ہی انسان کا دل موم اور آنکھ اسکبار ہو جاتی ہے۔ اس کا وقت غنا بھی دوپہر اور موسم ساون بھادوں کا ...

                                               

درباری

درباری میں شدھ رکھب، کومل گندھار، شدھ مدھم، کومل دھیوت اور کومل نکھاد استعمال ہوتے ہیں۔ ان میں گندھار اور دھیوت اندولن ہوتے ہیں۔ دربادی کا وادی سر رکھب اور سموادی گرام سپتک کی دھیوت ہے۔ بعض موسیقار نکھاد کو بھی سموادی سر مانتے ہیں۔

                                               

راگیشری (راگ)

اس کا وادی سر مدھم اور سموادی سر کھرج ہے۔ بغض گائک گندھار کو وادی اور دھیوت کو سموادی مانتے ہیں جو دونوں‎ں صورتوں میں مروج اور درست ہے۔ مدھم اور کھرج کی مینڈھیں اور گندھار دھیوت کی تکرار دل کو بہت ہی بھلی لگتی ہیں۔ سر پنچم اس میں ورج ہے یعنی مستع ...

                                               

للت

بعض گائک اس کو ماروا ٹھاٹھ کا راگ مانتے ہیں اور بعض کے نزدیک ٹوڈی ٹھاٹھ بھی ہے مگر مستند موسیقی کی کتابوں میں للت کو بھیروں ٹھاٹھ میں ہی دکھایا گیا ہے۔ للت میں چند ایک دوسرے راگ اور راگنیوں کی طرح دونوں مدھیں مستعمل ہیں مگر ان کے استعمال کا طریقہ ...

                                               

ماروا

بعض گاشک ماروا راگ کو "خشک" کہتے ہیں؛ لیکن یہ تو گائک کی آواز اور پیشکشی پر زیادہ منحصر ہے کہ وہ اس کو پر اثر انداز میں پیش کرے۔ ویسے اکثر و بیشتر گائک اس راگ کو زمانہ قدیم سے آج تک بڑی پسندیدگی سے گاتے ہیں۔ ماروا کو سوہنی، پوریا اور پراڑی سے بچا ...

                                               

مالکونس

مالکونس میں رکھب اور پنچم کے سر ورج ہوتے ہیں۔ اس میں مدہم شدھ اور گندھار دھیوت نکھاد کومل استعمال کیے جاتے ہیں۔ اس کا وادی سر مدہم اور سموادی کھرج ہے۔ گا-سا اور دھا-ما کی مینڈھ مالکونس کا روپ نکالتی ہے۔ انہیں مینڈھوں سے اس کی شکل واضح ہوتی ہے۔ ما ...

                                               

ملتانی (راگ)

ایک روایت کے مطابق یہ راگ حضرت امیر خسرو کی اختراع بتایا جاتا ہے اور ایک روایت کے یہ بھو ہے کہ اس راگ کے بانی حضرت غوث بہاؤالدین زکریا ملتانی ہیں؛ جنہوں نے پوریا دھناسری بھو مرتب فرمایا ہے۔ یہ روایات کس حد تک درست ہیں اس کا فیصلہ مختلف تاریخی کتب ...

                                               

میاں کی ٹوڈی

اس کو شدھ ٹوڈی بھی کہا جاتا ہے۔ یہ راگ میاں تان سین کی اختراع ہے یہ انھیں نے اس راگ کو اس قدر گایا یا اسے رواج دیا کہ ان کے ہی نام سے منسوب ہو گیا یا کر دیا گیا۔ امروہی میں پنچم کو ہر بار لگا کر آنا بہت ضروری ہے وگرنہ اس راگ کی شکل و صورت کے نامک ...

                                               

پوریا دھناسری

پوریا دھناسری سمپورن راگ ہے لیکن بعض گائک اس کو کھاڈو سمپورن راگ بھی مانتے ہیں کیونکہ وہ آروہی آمروہی دونوں میں پنچم کا استعمال کرتے ہیں، مگر مروج کھاڈو سمپورن ہی ہے۔ اس میں گھندھار وادی اور پنچم سموادی سر ہے۔ اس راگ کو پوربی سے فقط کومل مدھم کے ...

                                               

پیلو (راگ)

ویسے تو یہ راگ سمپورن ہے لیکن اس کی آروہی آمروہی قدرے ٹیڑھو ہیں اس لیے اسے وکر سمپورن کہا جاتا ہے۔ پیلو میں دونوں نکھادیں اور دونوں گندھاریں استعمال ہوتی ہیں۔ پیلو میں شدھ گندھار اور شدھ نکھاد آروہی میں استعمال کیے جاتے ہیں اور امروہی میں کومل نک ...

                                               

کیدارا

بعض گائک اس کو کلیان ٹھاٹھ پر بھی مانتے ہیں کیونکہ اس میں دونوں مدھم استعمال ہودے ہیں۔ مگر چونکہ کومل مدھم پر زیادہ زور ہونے کی وجہ سے اس کو بلاول ٹھاٹھ پر ہی تسلیم کیا گیا ہے۔ اس لیے اسے مشر میل یعنی مشترک میل ٹھاٹھ کا راگ بھی کہا جاتا ہے۔ دونوں ...

Free and no ads
no need to download or install

Pino - logical board game which is based on tactics and strategy. In general this is a remix of chess, checkers and corners. The game develops imagination, concentration, teaches how to solve tasks, plan their own actions and of course to think logically. It does not matter how much pieces you have, the main thing is how they are placement!

online intellectual game →