ⓘ Free online encyclopedia. Did you know? page 344



                                               

سریہ حمزہ ابن عبد المطلب

سریہ حمزہ ابن عبد المطلب یا سریہ سیف البحر سب سے پہلا سریہ ہے جو رمضان 1ھ بمطابق 623ء میں ہوا جسے حضورﷺ نے ہجرت کے سات مہینہ بعد حمزہ بن عبدالمطلب کی زیر قیادت رمضان میں قریش کے تجسس کے لیے روانہ کیا تھا۔ حضورصلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے سفید پرچم ...

                                               

سریہ خالد بن ولید (بنی جذیمہ)

شوال 8 ھ میں محمد صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے خالد بن ولید کے ساتھ 350 افرد کو بھیجا جو مہاجرین، انصار اور بنو سلیم پر مشتمل تھے، بنو جذیمہ کی طرف بھیجا۔ یہی سریہ یوم الغمیصاء ہے یہ مکہ کے نشیبی علاقے یلملم کی طرف آباد تھے۔ محمد صلی اللہ علیہ و آ ...

                                               

سریہ خالد بن ولید (عزی)

25 رمضان 8 ھ کورسول اللہ ﷺ نے العزیٰ کی جانب سریہ خالد بن ولیدروانہ فرمایا گیا۔ العزٰی بت طرف 30 سواروں کے ساتھ خالد بن ولید کو توڑنے کے لیے بھیجا انہوں نے جا کر اس بت کو توڑ دیا واپس آکر بتایا کہ ہم توڑ کر آ گئے ہیں۔ رسول اللہ ﷺنے پوچھا کہ تم نے ...

                                               

سریہ خالد بن ولید (نجران)

یہ سریہ اکیدر ابن مالک کی طرف بھیجا گیا جو دومۃ الجندل کے مقام پر تھایہ مسیحی تھاخالد بن ولید کو رجب 9ھ روانہ کیا گیاخالد بن ولید کو فرمایا تم اکیدر کو گائے کا شکار کرتا پاؤگے تم اس کے پاس پہنچو تو اس کو قتل مت کرنا بلکہ اس کو زندہ گرفتار کرکے می ...

                                               

سریہ خبط

اس سریہ کوامام بخاری نے غزوہ سیف البحر کے نام سے ذکر کیا ہے۔ رجب 8ھ میں حضورﷺ نے ابوعبیدہ بن الجراح کو تین سو صحابہ کرام کے لشکر پر امیر بناکر ساحل سمندر کی جانب روانہ فرمایاتاکہ یہ لوگ قبیلہ جہینہ کے کفار کی شرارتوں پر نظر رکھیں اس لشکر میں خورا ...

                                               

سریہ رجیع

عضل اور قارہ کے چند لوگوں نے جناب رسول اللہ کی خدمت اقدس میں آ کر عرض کیا یا رسول اللہ ہمارے یہاں مسلمان ہیں آپ چند صحابہ کو ہمارے ہمراہ بھیج دیجئے تاکہ وہ دین کی باتیں ہم کو سکھائیں حضور نے خبیب بن عدی انصاری اور مرثد بن ابی مرثد غنوی اور خالد ب ...

                                               

سریہ زید بن حارثہ (الطرف)

جمادی الاخر 6 ہجری میں سریہ زید بن حارثہ طرف کے مقام کی جانب بھیجا گیا یہ ایک چشمہ ہے جو مدینہ سے 36 میل کی مسافت پر تھا الطرف النخیل اور المراض کے قریب البقرہ کے اس راستے پر ہے جو المحجہ کو گیااس میں زید بن حارثہ کے ساتھ 15 افراد بھی تھے جو بنو ...

                                               

سریہ زید بن حارثہ (العیص)

جمادی الاولی 6 ہجری میں سریہ زید بن حارثہعیص کی طرف روانہ کیا گیا یہ جگہ مدینہ منورہ سے چار راتوں کی مسافت پر ہے اس میں 70 سوار بھی آپ کے ساتھ تھے۔ اس کی وجہ یہ تھی کہ رسول اللہ ﷺکو معلوم ہوا کہ شام سے قریش کا ایک قافلہ آیا ہے تو اس قافلہ کو روکن ...

                                               

سریہ زید بن حارثہ (بنی سلیم)

ربیع الثانی 6 ہجری میں سریہ زید بن حارثہ الجموم میں بنی سلیم کی طرف بھیجا گیا یہ مدینہ سے 48میل کے فاصلہ پر وادی نخل کا نواحی علاقہ ہے وہاں پر مزینہ قبیلہ کی عورت ملی جس کا نام حلیمہ تھا اس نے بنی سلیم کے اترنے کے جگہ کی نشان دہی کر دی بنی سلیم ب ...

                                               

سریہ زید بن حارثہ (حسمی)

جمادی الاخری 6 ہجری کو سریہ زید بن حارثہ حسمی کے مقام پر بھیجا گیا جو وادی قریٰ کے آگے ہے اس کا سبب یہ ہوا کہ دحیہ بن خلیفہ کلبی قیصر کی طرف سے اس طرح آئے کہ اس نے انہیں خلعت اور صلہ بھی دیا تھا جب یہ حسمی کے مقام پر پہنچے تو قبیلہ جذام کے چند لو ...

                                               

سریہ زید بن حارثہ (قردہ)

جنگ بدر کے زخم ابھی بھرے نہیں تھے کہ اہل مکہ کو اپنے تجارتی سامان کو ملک شام لے جانے کی پریشانی نے آن گھیرا۔ گرمیوں کا موسم آگیا تھا اوراہل مکہ کے تجارتی قافلے کا امیر صفوان بن امیہ کو منتخب کیا گیا تھا۔ صفوان بن امیہ نے اپنی پریشانی سے مکہ کے مع ...

                                               

سریہ زید بن حارثہ (مدین)

                                               

سریہ زید بن حارثہ (وادی القری)

                                               

سریہ سالم بن عمیر

بنو قریظہ میں ایک بنو عمر بن عوف کا ایک یہودی ابو عفک نام کا محمد صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کے خلاف ہجو کہا کرتا اور لوگوں کو آپ کے خلاف ابھارتا تھا۔ اس کو قتل کرنے کے لیے ایک صحابی سالم بن عمیر نے نذر مانی، یہ سریہ صرف اسی ایک مقصد کے لیے تھا۔ اس ...

                                               

سریہ سعد بن ابی وقاص

سریہ سعد بن ابی وقاص یا سریہ خرار تیسرا سریہ ہے جسے حضورﷺ نے ہجرت کے 9 مہینہ بعد ذی قعدہ1ھ بمطابق 623ء میں خرار کے جانب ایک قافلے کا پتہ چلانے کے لیے روانہ کیا۔ حضورﷺ نے سفید پرچم عطا کیا جسے مقداد بن عمرونے تھام لیا۔ اس سریہ میں کل 80 مہاجر قوم ...

                                               

سریہ سعد بن زید اشہلی

رمضان 8 ہجری میں سریہ سعد بن زید الاشیلی مناۃ کی جانب بھیجا گیا جب مکہ فتح ہو تو سعد بن زید الاشہلی کو المشللغسان کی طرف روانہ فرما یا یہاں اوس اور خزرج کا بت تھافتح مکہ کے دن انہیں20 سواروں کے ساتھ بھیجا۔ سعد جب مناۃ بت کی طرف بڑھے تو ایک برہنہ ...

                                               

سریہ شجاع بن وہب اسدی

سریہ شجاع بن وہب الاسدی ربیع الاخر 8 ہجری میں السی کی طرف بنی عامر کی طرف بھیجا گیا۔ رسول اللہ ﷺ نے 24 آدمیوں کو ہوازن کے ایک مجمع کی طرف بھیجا جو السی میں تھا، یہ رکبہ کے نواح مین المعدن سے آگے کی طرف جگہ کا نام ہے مدینہ سے مسافت 5 رات کی ہے۔ وہ ...

                                               

سریہ ضحاک ابن سفیان کلابی

9 ہجری میں ضحاک بن ابی سفیان کلابی، کو اصید بن سلمہ بن قرط اور کچھ دیگر صحابہ کے ساتھ بنوکلاب کی شاخ قرطا کی طرف بھیجا گيا، مقام زج لاوہ پر آمنا سامنا ہوا تو مسلمانوں نے انہیں اسلام کی دعوت دی، انہوں نے انکار کر دیا، لڑائی شروع ہو گئی، مسلمان غال ...

                                               

سریہ طفیل بن عمرو دوسی

سریہ طفیل بن عمر الدوسی شوال 8ھ میںغزوہ طائف روانگی سے قبل محمد صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے طفیل بن عمرو دوسی کو عمرو بن حممہ دوسی کے بت ذوالکفین کو گرانے کے لیے بھیجا اور حکم دیا کہ: اپنی قوم کے مسلمان افراد کو اپنے ساتھ لے لینا اور واپس آ کر ہم ...

                                               

سریہ عبد الرحمن بن عوف

شعبان 6ہجری میں سریہ عبد الرحمن بن عوف دومۃ الجندل روانہ کیا گیا۔ جب آپ روانہ کرنے لگے تو عبد الرحمن بن عوف کو بلایا سامنے بٹھا کر عمامہ خود باندھا اور ہدایات دیں کہ اللہ کے نام پر جہاد کرو جو اللہ کا انکار کرے اس سے لڑوو خیانت،عدہ خلافی نہ کرنا ...

                                               

سریہ عبد اللہ بن انیس

محرم 4 ہجری کی 4 تاریخ کو یہ خبر ملی کے خالد بن سفیان ہذلی مسلمانوں پر حملہ کرنے کی تیاری کر رہا ہے۔ اس سریہ کا مقصد اس لشکر کو تتربتر کرنا تھا، جو عرفہ کے مقام پر مسلمانوں سے جنگ کے لیے اکٹھا کیا جا رہا تھا۔

                                               

سریہ عبد اللہ بن جحش

سریہ عبد اللہ بن جحش یا سریہ نخلہ دور نبوی کا اہم ترین سریہ سمجھا جاتا ہے۔ حضورصلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے ہجرت کے دوسرے سال رجب میں عبد اللہ بن جحش کو 12 مہاجر قوم صحابہ کے ساتھ بطن نخلہ روانہ کیا۔ اس سریہ میں عبد اللہ بن جحش کے ساتھ ابوحذیفہ بن ...

                                               

سریہ عبد اللہ بن رواحہ

شوال6 ہجری میں سریہ عبد اللہ بن رواحہ اسیر بن زارم یہودی کی طرف خیبر کی طرف بھیجا گیا اس کی وجہ یہ تھی جب ابو رافع قتل ہو گیا تو اس کی جگہ اسیر بن زارم کو امیر بنایا گیا وہ بھی غطفان اور دوسری قبائل کو جنگ کے لیے اکساتا تھا۔ جب رسول اللہ کو پتہ چ ...

                                               

سریہ عبد اللہ بن عتیک

6ھ کے واقعات میں سے ابورافع یہودی کا قتل بھی ہے۔ ابورافع یہودی کا نام عبد اللہ بن ابی الحقیق یا سلام بن الحقیق تھا۔ یہ بہت ہی دولت مند تاجر تھا لیکن اسلام کا زبردست دشمن اور بارگاہ نبوت کی شان میں نہایت ہی بدترین گستاخ اور بے ادب تھا۔ یہ وہی شخص ...

                                               

سریہ عبیدہ ابن حارث

سریہ عبید ہ ابن حارث یا سریہ رابغ دوسرا سریہ ہے جسے حضورصلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے ہجرت کے آٹھ مہینہ بعد شوال 1ھ بمطابق 623ء میں بطن رابغ روانہ کیا۔ حضورصلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے سفید پرچم مرحمت فرمایا جسے مسطح بن اثاثہ نے تھام لیا۔ عبیدہ ابن ...

                                               

سریہ علقمہ بن مجزز مدلجی

ربیع الاخر 9 ہجری میں حبشہ کی جانب سریہ علقمہ بن مجزز المدلجی بھیجا گیا اطلاع ملی کہ الحبشہ کے لوگ ہیں جنہیں اہل جدہ نے دیکھا رسول اللہ ﷺ نے علقمہ بن مجزز کو تین سو سواروں کے ہمراہ بھیجا جب وہ ہوں پہنچے تو سمندر چڑھ گیا یہ لوگ بھاگ کر ایک جزیرے پ ...

                                               

سریہ علی ابن ابی طالب (فدک)

شعبان 6 ہجری میں سریہ علی بن ابی طالب 100 افراد کے ساتھ بنو سعد بن بکر کی طرف بھیجا گیا اس کی وجہ یہ تھی کہ اطلاع ملی کہ وہ خیبر کے یہودیوں کی مدد کرنا چاہتے ہیں علی المرتضی کو فدک اور خیبر کے درمیان الہمجکے مقام پر ایک شخص ملااس سے جب بنو سعد کے ...

                                               

سریہ علی ابن ابی طالب (فلس)

ربیع الاخر 9 ہجری کو قبیلہ طے کے ایک بت الفلس کو منہدم کرنے کے لیے سریہ علی بن ابی طالب بھیجا گیا۔ اس میں ڈیڑھ سو انصار شامل تھے سو اونٹنیوں پر اور پچاس گھوڑوں پر سوار تھے،اس میں بڑا جھنڈا سیاہ اور چھوٹا سفید رنگ کا تھا یہ صبح ہوتے ہی آل حاتم پر ...

                                               

سریہ علی ابن ابی طالب (یمن)

محمد صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے علی بن ابی طالب کو بذات خود جھنڈا باندھا، اپنے ہاتھ سے انہیں عمامہ پہنایا اور فرمایا: علی المرتضی کو 10 رمضان المبارک کی یمن میں علاقہ مذحج یہ ایک شخص کا نام تھا جو قبیلہ کا مورث اعلیٰ تھا کی طرف بھیجا انہیں جھنڈا ...

                                               

سریہ عمر بن الخطاب

ذیلی نص متن شعبان 7 ہجری میں سریہ عمر فارق تربہ کی طرف گیایہ العبلاء کے نواح میں ہے یہ مکے سے چار رات کے فاصلے پرصنعاء نجران کی شاہراہ پرواقع ہے جس میں 30 افراد تھے اور ایک رہبر جو بنو بلال سے تھا آپ کے ساتھ گیا یہ لوگ رات کو چلتے دن کو چھپ جاتے ...

                                               

سریہ عمرو بن امیہ ضمری

6ہجری میں سریہ عمرو بن امیہ ضمری بھیجا گیا اس میں دو افراد تھے جس میں عمرو بن امیہ ضمری اور سلمہ بن اسلم یا جبار بن صخر کو ابو سفیان کو قتل کرنے کے لیے بھیجا اس کی وجہ یہ تھی کہ ایک شخص ابو سفیان بن حرب نے ایک شخص کو مدینہ بھیجا کہ دھوکے سے رسول ...

                                               

سریہ عمرو بن عاص (ذات السلاسل)

سریہ عمرو بن العاص یا ذات السلاسل غزوہ موتہ کے ایک مہینے بعد جمادی الآخر 8 ہجری کو پیش آیا۔ یہ بنو قضاعہ کی طرف بھیجا گیاجومدینہ سے دس دن کے فاصلہ پر ہے رسول اللہ ﷺ نے عمرو بن العاص کو لشکر کا قائد مقرر کرتے ہوئے ان کے ساتھ تین سو سپاہی بھیجے۔

                                               

سریہ عمرو بن عاص (سواع)

جب مکہ فتح ہو تو رسول اللہ نے عمرو بن العاص کو سواع کی طرف روانہ کیا جو ہذیل کا بت تھا تاکہ اسے توڑ ڈالیں۔ عمرو بن العاص بیان کرتے ہیں جب مین وہاں پہنچا تو ایک مجاور ملا اس نے پوچھا کس مقصد کے لیے آئے ہو میں نے بتایا کہ اس بت کو گرانے کے لیے رسول ...

                                               

سریہ عمیر بن عدی

سریہ عمیر بن عدی ہجرت کے دوسرے سال رمضان میں پیش آیا۔ اس میں حضورصلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے عمیر بن عدی خطمی کویہودی قبیلہ بنو خطمہ کی ایک شاعرہ عصماء بنت مروان خطمیہ کے قتل کے لیے روانہ کیا تھا، یہ ان کے رشتہ کی بہن بھی تھی۔

                                               

سریہ عکاشہ بن محصن (جناب)

                                               

سریہ عکاشہ بن محصن (غمر)

جب عکاشہ بن محصن اور ان کے ساتھی مدینہ سے چل کر اس غمرمرزوق چشمہ تک پہنچے انہیں بنی اسد کو خبر ہو چکی تھی وہ سارا قبیلہ وہاں سے فرار ہو گیا عکاشہ بن محصن کو کوئی شخص وہاں پر نہ ملا۔ شجاع ابن وہب کو ان کے کھوج کے لیے بھیجا وہ کھوج لگا کر آئے مسلما ...

                                               

سریہ عیینہ بن حصن فزاری

محرم 9 ہجری میں عیینہ بن حصن فزاری 50 سواروں کے ساتھ بنو تمیم کی طرف گئے، جن میں کوئی بھی انصار یا مہاجر نہ تھا وہ اس وقت سقیا اور بنوی تمیم کے علاقے کے درمیان ٹھہرے ہوئے تھے۔ وہ رات بھر چلتے رہے دن کو ایک جگہ پر چھپ گئے پھر ایک جنگل پر اچانک مشر ...

                                               

سریہ غالب بن عبد اللہ ليثی (مصاب)

سریہ غالب بن عبد اللہ الليثی صفر 8ھ میں ہوا جو فدک میں اس جگہ بھیجا گیا جہاں بشیر بن سعد اور ان کے ساتھی شہید ہوئے تھے اسے مصاب بھی کہتے ہیں کیونکہ یہاں بشیر بن سعد پر مصیبت آئی تھی اس میں غالب بن عبد اللہ کے ساتھ دو سو200 آدمی تھے جنہوں نے صبح ہ ...

                                               

سریہ غالب بن عبد اللہ کلبی

سریہ غالب بن عبد اللہ اللیثی رمضان7 ہجری میں بھیجا گیا رسول اللہ نے غالب بن عبد اللہ کو بنی عوال اور بنی عبد بن ثعلبہ کی طرف بھیجا جو المیفعہ میں تھے یہ مقام مدینہ منورہ سے نجد کی طرف آٹھ برید اس مین دوسو تیس230 افراد شامل تھے انہوں نے اہل میفعہ ...

                                               

سریہ غالب بن عبد اللہ کلبی (کدید)

صفر 8 ہجری الکدید سریہ غالب بن عبد اللہ کلبی بنی الملوح بھیجا گیا ان کا پورا نام غالب بن عبد اللہ بن مسعربن جعفربن کلب لیثی ہے۔ ان کا وطن مکہ معظمہ ہے اوریہ فتح مکہ سے پہلے ہی مسلمان ہو گئے تھے۔ فتح مکہ کے موقع پر ان کو مکہ مکرمہ کے راستوں کی درس ...

                                               

سریہ قطبہ ابن عامر

قطبہ بن عامر بن حدیدہ صحابی کے نام سے منسوب یہ کارروائی بنو خثعم کے خلاف تربہ کے قریب ہوئی، قطبہ بن عامر سمیت 20 صحابی شریک ہوئے وہ دس اونٹوں پر سوار تھے جنہیں باری استعمال کرتے تھے۔ انہیں حکم تھا کا اچانک حملہ کریں، کیوں کہ دشمن کا علاقہ تھا اور ...

                                               

سریہ محمد بن مسلمہ

یہ سریہ کعب بن اشرف نامی ایک یہودی شاعر و سردار کو قتل کرنے لیے پیش آيا۔ کعب بن اشرف نے جنگ بدر کے بعد، معاہدہ کی خلاف ورزی کی اور مکہ میں مشرکین مکہ سے ملنے چلے گيا۔ جس بنا پر اس کو قتل کیا گيا۔

                                               

سریہ محمد بن مسلمہ (ذو قصہ)

سریہ محمد بن مسلمہ میں 10 افراد شریک تھے۔ یہ لوگ بنو ثعلبہ کی طرف گئے۔ رات کے وقت پہنچے، لڑائی ہوئی جس میں 9 شہید اور ایک شدید زخمی ہوئے، جن کی جان پچا لی گئی۔

                                               

سریہ محمد بن مسلمہ (قرطا)

بنو بکر بن کلاب کا قبیلہ ضریہ کی جانب، جو مدینہ شہر سے سات دن کی مسافت پر واقع ہے، مقام بکرات میں آباد تھا۔ محمد صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے محمد بن مسلمہ کو 30 سوار دے کر بھیجا۔ جب انہوں نے بنو بکر پر حملہ کیا، وہ جان بچا کر بھاگ گئے۔ محمد بن مس ...

                                               

سریہ مرثد بن ابو مرثد

قبیلہ عضل اور قارہ کے کچھ لوگ محمد صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم کے پاس آئے اور آپ سے چند معلم طلب کیے تاکہ وہ ان قبیلوں میں تبلیغ اسلام کریں۔ آپ نے مرثد بن ابی مرثد کی قیادت میں چھ صحابہ کو روانہ کیا، جب یہ لوگ بنو ہذیل کے کنویں رجیح پر پہنچے تو انہ ...

                                               

سریہ منذر بن عمرو

ماہ صفر 4ھ میں بئرمعونہ کا مشہور واقعہ پیش آیا۔ ایک نجدی عامر بن مالک کلابی نام کا ایک نجدی، مدینہ منورہ آیا، وہ مسلماں تو نہ ہوا، لیکن اس نے محمد صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم سے درخواست کی کہ، کچھ لوگ اس کے ساتھ بھیج دیے جائیں تاکہ اس کے قبیلہ میں و ...

                                               

سریہ کرز بن جابر فہری

جمادی الاخری 6 ہجری میں سریہ کرز ابن جابر الفہری عکل اور عرینہ کی طرف 20 سواروں کے ساتھ بھیجا گیا عکل اور عرینہ کے کچھ لوگ مسلمان ہو کر مدینہ آئے، انہیں مدینہ کی آب و ہوا موافق نہ آئی تو انہیں نبیﷺ نے مدینہ سے باہر جہاں صدقے کے اونٹ رہتے تھے بھیج ...

                                               

سریہ کعب بن عمیر غفاری

سریہ کعب بن عمیر غفاری ربیع الاخر 8 ہجری میں ذات اطلاح میں جو وادی القریٰ کے آگے ہے بھیجا گیا ۔ رسول اللہ ﷺ نے کعب بن عمیر غفاری کو 15 آدمی دیکر بھیجا جب وہ ذات اطلاح پہنچے جو شام کے علاقے میں ہے انہوں نے ایک بہت بڑی جماعت پائی انہیں اسلام کی دعو ...

                                               

غزوہ ذی قرد

صلح حدیبیہ کے عہد کے بعد محمد صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم اپنے سب سے بڑے دشمن قریش کے مکر و فریب اور شر و عداوت سے مطمئن ہوچکے تھے کیونکہ یہ عہد ہوا تھا کہ دس سال تک جنگ بند رہے گی۔ تب آپ اپنے سب سے شریر دشمن یہود کے طرف متوجہ ہوئے کیونکہ یہود ہر پ ...

                                               

باب: محمد/سانچہ جات

Free and no ads
no need to download or install

Pino - logical board game which is based on tactics and strategy. In general this is a remix of chess, checkers and corners. The game develops imagination, concentration, teaches how to solve tasks, plan their own actions and of course to think logically. It does not matter how much pieces you have, the main thing is how they are placement!

online intellectual game →