ⓘ Free online encyclopedia. Did you know? page 232



                                               

وبائی امراض قانون 1897ء

وبائی امراض قانون 1897ء برطانوی ہند میں وبائی امراض سے مقابلہ کرنے کے لیے بنایا گیا تھا۔ یہ جدید دور میں بھی بھارت میں نافذ العمل ہے اور خاص ذکر ملک میں کورونا وائرس کے تیزی سے پھیلاؤ کی وجہ سے دیکھنے میں آیا۔

                                               

ای سی ایل

خروج کنٹرول فہرست یا ای سی ایل یہ حکوت پاکستان کا ایک خارجہ سرحدی نظام ہے۔ اس فہرست میں جس شخص کا نام ڈالا جاتا ہے وہ ملک سے باہر نہیں جاسکتا۔ آئین پاکستان میں اس قانون کا بل 1981 کو پاس کرالیا گیا جس کے مطابق وفاقی حکومت کو یہ اختیار ہے کہ وہ ہر ...

                                               

سنکیانگ میں مسلمان

چین کے مغربی سرحدی علاقے سنکیانگ میں آباد مسلمان ایغور اقلیتی برادری سے تعلق رکھنے والوں پر چین کی حکومت کی طرف سے ایک نئی پابندی کی گئی ہے، جس کے تحت اب ایغور مسلمان والدین اپنے نو زائدہ بچوں کے ایسے نام نہیں رکھ سکیں گے،جو حکام کے بقول، "انتہائ ...

                                               

ترک اغوا

ترک اغوا عثمانی قزاقوں کے غلام چھاپوں کا ایک سلسلہ تھا جو آئس لینڈ میں 20 جون اور 19 جولائی 1627 کے درمیان ہوا تھا۔ ، ڈچ سمندری ڈاکو مرات رئیس کی کمان کے تحت مراکش اور الجزائر سے آنے والے قزاقوں نے ، ، جنوب مغربی ساحل پر واقع گرینڈاوک گاؤں ، مشرق ...

                                               

آرمینیا کے آذریوں کا قتل عام

آذری لوگ ایران اور آذربائیجان کے علاوہ بیسویں صدی کے شروع تک آرمینیا میں بھی آباد تھے مگر 1905ء سے لے کر 1920ء تک آرمینیائی نسل کے لوگوں نے ان کا شدید قتل عام کیا۔ اس کی جھلک موجودہ زمانے تک نکارنوکاراباخ کے مسئلہ میں بھی دیکھی گئی۔ اس میں 15 لاک ...

                                               

حمیدیہ قتل عام

حمیدیہ قتل عام ، جسے 1894–1896 کی آرمینیائی نسل کشی کے آرمینیائی قتل عام کے طور پر بھی جانا جاتا ہے ، سلطنت عثمانیہ میں آرمینیوں کے قتل عام تھے جو سن 1890 کی دہائی کے وسط میں پیش آئے تھے۔ ایک اندازے کے مطابق ہلاکتوں کی تعداد 80،000 سے لے کر 300،0 ...

                                               

دیار باقر قتل عام (1895)

دیار باقر قتل عام وہ قتل عام تھے جو سلطنت عثمانیہ کے دیار بیکر ولایت میں 1894 سے 1896 کے درمیان ہوئے۔ یہ واقعات حمیدیہ قتل عام کا حصہ تھے اور انہوں نے ولایت کی مسیحی آبادی یعنی آرمینیوں اور اشوریوں کو نشانہ بنایا تھا۔ اس قتل عام کی ابتدا آرمینین ...

                                               

قدیم آسٹریلوی باشندوں کا قتل عام

آسٹریلیا کے قدیم باشندوں کو استعماری نظام کے آغاز نے تباہ کر دیا۔ ان کے تاریخ میں کئی قتلِ عام ملتے ہیں۔ آسٹریلیا میں برطانوی استعمار کا آغاز 1788ء میں ہوا۔ اس کا سب سے پہلا اثر تو یہ تھا کہ انگریز اپنے ساتھ ایسی بیماریاں لے گئے جن کے خلاف آسٹریل ...

                                               

الدوایمہ قتل عام

الدویمہ قتل عام ، یہ واقعی 29 اکتوبر 1948 کو عرب اسرائیلی جنگ کے دوران رونما ہوا تھا. جب اسرائیلی فوج نے فلسطینی عرب قصبے الدویمہ پر حملہ کر دیا اور عام شہریوں کے قتل کر دیا. یہ واقعہ اس موقع پر پیش آیا جب اس آپریشن پر یوآیو کے دوران آئی ڈی ایف ک ...

                                               

میدان شہر حملہ

21 جنوری 2019 کو طالبان نے افغانستان کے وسطی صوبے میدان وردک کے شہر میدان شہر کے ایک عسکری احاطہ میں حملہ کر کے افغان نیشنل سیکورٹی فورس کے 100 سے زائد اہلکاروں کو ہلاک کر دیا یہ حملہ طالبان اور امریکا کے درمیان میں عارضی جنگ بندی کے مذاکرات کے ع ...

                                               

دیر یاسین قتل عام

دیر یاسین قتل عام 9 اپریل 1948 کو ہوا جب صیہونی فوجی گروپوں، ارگن اور لیہی کے تقریباً 120 جنگجوؤں نے سینکڑوں فلسطینی عرب کو دیر یاسین میں ہلاک کر دیا. دیر یاسین ، یروشلم کے قریب تقریباً 600 لوگوں کے ایک عرب گاؤں تھا. یہ حملہ اس وقت ہوا جب یہودی م ...

                                               

فتح قسطنطنیہ

قسطنطنیہ 29 مئی 1453ء کو سلطنت عثمانیہ کے ہاتھوں فتح ہوا۔ صدیوں تک مسلم حکمرانوں کی کوشش کے باوجود دنیا کے اس عظیم الشان شہر کی فتح عثمانی سلطان محمد ثانی کے حصے میں آئی جو فتح کے بعد سلطان محمد فاتح کہلائے۔ سلطان محمد فاتح نے اجلاس کے دوران اپنے ...

                                               

بلیک ہول (کلکتہ)

کلکتہ میں ایک تاریخی کوٹھڑی کا نام، جس میں انگریزوں کی روایت کے مطابق 1756ء میں نواب سراج الدولہ نے 146 انگریز قیدیوں کو بند کیا تھا۔ یہ کوٹھڑی محض 20 مربع فٹتھی اور جو قیدی اس میں بند کیے گئے تھے ان میں سے اگلی صبح صرف 23 زندہ سلامت باہر نکلے۔ ا ...

                                               

چوری چورا سانحہ

چوری چورا سانحہ 4 فروری، 1922ء کو تحریک خلافت کی حمایت میں لوگوں نے مشتعل ہو کر اتر پردیش کے ضلع گورکھپور ایک گاؤں چوری چورا میں ایک تھانے کو آگ لگا دی جس میں 22 سپاہی جل مرے۔ اس واقعے کو آڑ بنا کر کرگاندھی نے اعلان کر دیا کہ چونکہ یہ تحریک عدم ت ...

                                               

روانڈیائی نسل کشی

روانڈا کی نسل کشی ، جو توتسیوں کے خلاف نسل کشی کے نام سے بھی جانا جاتا ہے ، روانڈا میں توتسی ، تووا ، اور اعتدال پسند ہوتو کا اجتماعی ذبیحہ تھا ، جو روانڈا کی خانہ جنگی کے دوران 7 اپریل سے 15 جولائی 1994 کے درمیان رونما ہوا تھا ۔ 1990 میں ، توتسی ...

                                               

سینڈی ہک ایلمینٹری اسکول فائرنگ

دسمبر 14، 2012 کا روز، نیُوٹاؤن، کونیٹِکٹ میں واقع سَینڈی ہُک نامی قصبے کا سینڈی ہُک ایلمینٹری اسکول میں اَیڈم لَینزا نے بیس بچّوں اور چھ بالغ ملازمین کو گولی مار کر قتل کیا۔ سکول تک گاڑی چلا کر جانے سے پہلے، اس نے اپنی والدہ کو ان کا نیوٹاؤن گھر ...

                                               

پٹسبرگ کے کنیسہ میں فائرنگ

27 اکتوبر 2018ء کو پٹسبرگ، پنسلوانیا کے علاقے اسکوئرل ہِل میں واقع ٹری آف لائف – اور لسیمخا نامی کنیسہ میں جب روزِ سبت کی صبح کی اور برت ملاہ کی رسومات جاری تھیں کہ اندھا دھند فائرنگ شروع ہوئی۔ گیارہ افراد جاں بحق اور چھ زخمی ہو گئے۔ واحد مشتبہ ش ...

                                               

سقوط بغداد 1258ء

1258ء میں منگولوں کے ہاتھوں بغداد کی تباہی اور خلافت عباسیہ کے خاتمے کو سقوط بغداد کے نام سے یاد کیا جاتا ہے۔ بغداد کا محاصرہ جو ١٢٥٨ء میں ہوا ایک حملہ، جارحیت اور بغداد شہر کی بربادی تھا، اس حملہ نے بغداد کو مکمل طور پر برباد کر دیا باشندے جن کی ...

                                               

کاوہاجوکی شوٹنگ سانحہ

کاوہاجوکی شوٹنگ سانحہ مغربی فن لینڈ کے شہر کاہوجوکی میں ہونے والا ایک گولی باری کا واقعہ تھا۔ 23 ستمبر 2008 کو کاہوجوکی کے ایک تربیتی کولج میں متی یوہانی ساری نامی ایک بائیس سالہ طالبعلم نے ادھ-خودکار-پستول سے 10 طلبہ کو ماردیا۔

                                               

منیا بس حملہ 2018ء

2 نومبر 2018ء کو نقاب پوش مسلح افراد نے مصری مسیحی افراد پر فائرنگ کر دی، یہ مسیحی افراد بس کے ذریعے مصری صوبے منیا سے گزر رہے تھے۔ حملہ آور تین گاڑیوں میں سوار تھے اور ان میں سے دو گاڑیاں بچ نکلنے میں کامیاب رہیں۔ مسافر بس قبطی مسیحی افراد کو مح ...

                                               

سانحۂ ٹھیری

سانحۂ ٹھیری ایک اجتماعی قتل تھا جو 6 جون 1963 کو پاکستان کے صوبے سندھ کے قصبے ٹھیری میں پیش آیا۔ اس میں دس محرم کے دن دیوبندی مسلمانوں کے ہجوم نے 118 شیعہ مسلمان مارے ۔ اگرچہ یہ شیعہ مسلمانوں کے خلاف پاکستان کا تشدد کا پہلا واقعہ نہیں تھا ، لیکن ...

                                               

کوئٹہ پولیس اسٹیشن حملہ، 2016ء

کوئٹہ پولیس اسٹیشن پر حملہ ، 24 اکتوبر 2016ء کو کوئٹہ کے شريب روڈ پر واقع پولیس تربیتی مرکز میں رات کو ہوئے ایک خودکش حملہ تھا۔ اس دوران میں تین خودکش حملہ آوروں نے تابڑ توڑ فائرنگ کی۔ اس دہشت گرد حملے میں 60 کیڈٹوں کی موت ہو گئی اور 100 سے زیادہ ...

                                               

انڈونیشیا میں اشاعت اسلام

سانچہ:تاریح انڈونیشیا میں اسلام کی آمد اور پھیلاؤ کی تاریخ واضح نہیں ہے۔ ایک نظریہ میں کہا گیا ہے کہ وہ نویں صدی سے پہلے ہی براہ راست عرب سے آیا تھا ، جبکہ ایک اور صوفی بیوپاری اور مبلغین کو 12 ویں یا 13 ویں صدی میں ہندوستان کے گجرات سے یا براہ ر ...

                                               

سبیالامریان

سبیالامریان Maria Sibylla Merian جرمن نژاد خاتون ،وفات 13 جنوری 1717) اپنے دور کی عظیم نقاش و عقلیت پسند خاتون۔ جنہیں حشرات و نباتات پر ماہرانہ تحقیق کی وجہ سے دنیائے سائنس میں خاص مقام حاصل ہے ۔

                                               

بھارت کے پیٹرول پمپ

مارچ 2012ء کے مطابق بھارت میں تقریباً پینتالیس ہزار پیٹرول پمپ ہیں۔ جن میں سے تقریباً سولہ ہزار پمپ انڈین اوئیل کے ہیں اور ہر پانچ ہزار پمپ بھارت پیٹرولیم اور ہندوستان پیٹرولیم کے ہیں۔ صرف انڈین اوئیل کی زیر ملکیت جتنے پمپ ہیں ان کی تعداد برطانیہ ...

                                               

خذر

Khazars یہ نیمخانہ بدوش ترک لوگ تھے ،جو اپنے وقت کی طاقتور ترین مغربی ترک خانیت سے ٹوٹے اور اپنی ہی الگ سیاست پیدا کی. مشرقی یورپ اور جنوب مغربی ایشیا کی اہم ترین تجارتی شہ رگ کے دونوں اطراف, خذریہ قرون وسطی کی سب سے اولی تجارتی منڈی بنا جو شاہرا ...

                                               

الچون ہن

الچون ہن ، جسے الکوونو ، ایلکسن ، الخون ، ایلخان ، ایلخانہ اور والکسن بھی کہا جاتا ہے ، ایک خانہ بدوش لوگ تھے جنہوں نے چوتھی اور چھٹی صدی عیسوی کے دوران وسطی ایشیا اور جنوبی ایشیاء میں ریاستیں قائم کیں۔ ان کا وقوع کا تذکرہ پہلے پیروپیمیسس میں ، ا ...

                                               

سکوتی

سکوتی یا اسکوتی ایک خانہ بدوش گھڑ سوار قوم جو اسور کے شمال میں رہتی تھی۔ آٹھویں صدی قبل از مسیح وہ ایران کو ہجرت کر گئے۔ لیکن سرجون دوم شاہِ اسور نے اُنہیں مزید جنوب مغرب کی طرف پھیلنے سے روکا۔ جب مادیوں نے نینوا کا محاصرہ کیا تو سکوتیوں نے شاہِ ...

                                               

نیزاک ہن

نیزاک ہن ہندوکش کے علاقے میں ہنوں کے چار گروہوں میں سے ایک تھے۔ نیزاک بادشاہ ، اپنے نمایاں سونے کے بیل کے سر والے تاج کے ساتھ مشہور ہیں ،اور غزنی اور کاپیسا سے حکومت کرتے تھے۔ اگرچہ ان کی تاریخ مبہم ہے ، نیزاک ہنوں کے ملے سکے ان کی عظمت کی خوشحال ...

                                               

جنگ موتہ

یہ جنگ جمادی الاول 8ھ میں جنوب مغربی اردن میں موتہ کے مقام پر ہوئی جو دریائے اردن اور اردن کے شہر کرک کے درمیان میں ہے۔ اس میں حضور صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم شریک نہیں تھے اس لیے اسے غزوہ نہیں کہتے بلکہ جنگ یا سریہ یا معرکہ کہتے ہیں۔ اس میں علی ال ...

                                               

قصبہ المریہ

قصبہ المریہ جنوبی ہسپانیہ میں ایک قلعہ بند کمپلیکس ہے۔ لفظ Alcazaba عربی لفظ قصبة سے ہے جس کے معنی ایک قلعہ بند دیوار کے درمیان شہر کے ہیں۔

                                               

دیہیا کاہنہ

دیہیا کاہنہ ایک شاویہ بربر جنگجو اور ملکہ تھی جس نے مغرب پر مسلمانوں کے حملے کی مزاحمت کی۔ وہ مذہبی اور عسکری رہنما تھی اور اس کا تعلق نومیدیا سے تھا جہاں اس نے اپنے علاقے کو بچانے کے لیے مسلمانوں سے ٹکر لی تھی۔ اس کی ولادت 7ویں صدی کے ابتدا میں ...

                                               

آپریشن نیمیسس

آپریشن نیمیسس سن 1920ء کی دہائی میں وفاقِ آرمینیائی انقلاب کا تیار کردہ منصوبہ تھا جس کا مقصد مبینہ آرمینیائی قتل عام میں شریک ترکی کی اعلٰی ترین شخصیات کو قتل کرنا تھا۔ اس آپریشن کا نام انتقام کی یونانی دیوی "نیمیسس" کے نام پر رکھا گیا۔ اس آپریش ...

                                               

اولیا چلبی

اولیاء چلبی مشہور سیاح تھے جنہوں نے عثمانی سلطنت کے تمام حصوں اور اس کی پڑوسی ریاستوں میں 40 سال تک سیاحت کی۔ 1611ء میں استنبول میں پیدا ہونے والے اولیاء عثمانی دربار سے وابستہ ایک جوہری کے صاحبزادے تھے۔ انہوں نے اعلیٰ تعلیم حاصل کی۔ ابتدا میں اس ...

                                               

بایزید اول

بایزید اول ، پیدائش 1354ء،, بجلی ") 1389ءسے 1402ء تک سلطنت عثمانیہ کے چوتھے فرمانروا رہے۔ انہوں نے اپنے والد مراد اول کے بعد مسند اقتدار سنبھالی جو جنگ کوسوو اول میں ہلاک ہو گئے تھے۔ اقتدار سنبھالنے کے فوراً بعد بایزید نے اپنے چھوٹے بھائی یعقوب ک ...

                                               

بلبل خاتون

بلبل خاتون کا سال پیدائش اور ابتدائی زندگی سے متعلق معلومات دستیاب نہیں ہو سکی ہیں۔ بلبل خاتون کی شادی عثمانی خاندان کے شہزادہ بایزید ثانی سے تب ہوئی جب وہ اماسیا کا گورنر تھا۔ 3 مئی 1481ء کو عثمانی سلطان محمد ثانی کے انتقال کے بعد بلبل خاتون بای ...

                                               

بوشنک درویش محمد پاشا

بوشنک درویش محمد پاشا عثمانی سیاست دان اور سلطنت عثمانیہ کے چھیاسٹویں وزیر اعظم تھے۔ درویش محمد پاشا 21 جون 1606ء سے 9 دسمبر 1606ء تک وزیراعظم سلطنت عثمانیہ رہے۔

                                               

جنگ انقرہ

جنگ انقرہ 20 جولائی 1402ء میں تیموری سلطنت کے بانی امیر تیمور اور عثمانی سلطان بایزید یلدرم کے درمیان لڑی گئی۔ دونوں کے درمیان بڑھتی ہوئی کشیدگی کے بعد تیموری و عثمانی افواج انقرہ کے مقام پر آمنے سامنے ہوئیں۔ جنگ میں امیر تیمور نے فتح حاصل کرکے ث ...

                                               

جنگ نوارینو

20 اکتوبر 1827ء کو عثمانی سلطنت اور برطانیہ، فرانس اور روس کی مشترکہ افواج کے درمیان لڑی جانے والی ایک بحری جنگ جس میں شکست کے ساتھ ہی عثمانی سلطنت کا زوال یقینی ہو گیا۔ یہ جنگ یونان کی جنگ آزادی کے سلسلوں کے اہم ترین معرکوں میں شمار ہوتی ہے۔ یہ ...

                                               

خانزادہ سلطان

خانزادہ سلطان کی پیدائش 1609ء میں استنبول میں ہوئی۔ اُن کی والدہ ملکہ کوسم سلطان اور والد عثمانی سلطان احمد اول تھے۔ خانزادہ سلطان عثمان ثانی، مراد رابع اور ابراہیم اول کی بہن تھیں جبکہ سلطان محمد رابع کی پھوپھی تھیں۔ خانزادہ سلطان کی ابتدائی زند ...

                                               

دور لالہ

دور لالہ سلطنت عثمانیہ کے 1718ء سے 1730ء تک کے دور کا روایتی نام ہے جو نسبتاً پرامن دور تھا۔ اس دور کا نام سلطنت عثمانیہ کے دربار میں حد درجہ پسند کیے جانے والے گل لالہ سے موسوم ہے۔ اس عہد میں نوشہرلی دمت ابراہیم پاشا سلطنت کے صدر اعظم تھے اور یہ ...

                                               

سلطنت عثمانیہ کا جمود

دورِ جمود میں بلقان کے کئی علاقے آسٹریا کے قبضے میں آ گئے۔ ریاست کے متعدد علاقے، جیسے مصر اور الجزائر، مکمل طور پر خود مختار ہو گئے اور بالآخر سلطنت برطانیہ اور فرانس کے قبضے میں چلے گئے۔ 17 ویں سے 19 ویں صدی کے دوران روس اور سلطنت عثمانیہ کے درم ...

                                               

سلطنت عثمانیہ کا زوال

عثمانی سلطنت کا دور زوال کو مورخین جدید دور بھی قرار دیتے ہیں۔ اس دور میں سلطنت نے ہر محاذ پر شکست کھائی اور اس کی سرحدیں سکڑتی چلی گئیں تنظيمات کے باوجود مرکزی حکومت کی ناکامی کے باعث انتظامی عدم استحکام پیدا ہوا۔

                                               

سلطنت عثمانیہ کا عروج

13 ویں صدی کے اواخر میں سلجوقی سلطنت ختم ہوئی اور اناطولیہ مختلف چھوٹی ریاستوں میں تقسیم ہو گیا۔ اس میں سے ایک سغوط کی ریاست تھی جہاں اسی نام کا ایک قبیلہ رہائش پزیر تھا۔ اس ریاست کا بانی اور قبیلے کا سردار ارطغرل تھا۔ 1281ء میں ارطغرل کے انتقال ...

                                               

سلطنت عثمانیہ کی توسیع

سلطنت عثمانیہ کی تاریخ کا یہ دور دو مختلف ادوار میں تقسیم کیا جا سکتا ہے: ایک 1566ء تک علاقائی، اقتصادی اور ثقافتی نمو کا دور جس کے بعد عسکری و سیاسی جمود کا دور۔

                                               

سلیم اول

سلیم اول المعروف سلیم یاووز 1512ء سے 1520ء تک سلطنت عثمانیہ کے سلطان تھے۔ سلیم کے دور میں ہی خلافت عباسی خاندان سے عثمانی خاندان میں منتقل ہوئی اور مکہ و مدینہ کے مقدس شہر عثمانی سلطنت کا حصہ بنے۔ اس کی سخت طبیعت کے باعث ترک اسے "یاووز" یعنی "درش ...

                                               

سلیم ثانی

سلیم ثانی سلطان سلیمان اول قانونی اور خرم سلطان کا بیٹا جو 1566ء سے 1574ء تک سلطنت عثمانیہ کے تخت پر بیٹھا۔ تھا۔ اس کے دور میں تمام تر ریاستی انتظامات صدر اعظم محمد صوقوللی پاشا نے سنبھالے۔

                                               

سلیمان شاہ

سلیمان شاہ قتلمش کا بیٹا اور ارطغرل کا باپ تھا۔ سلطنت عثمانیہ کے پہلے حکمران عثمان خان غازی کا دادا تھا، جس کا تعلق اوغوز ترکوں سے تھا۔ سلیمان شاہ کا ایک اور بیٹا تھا جس کا نام سارو بت تھا جو بے ہوجا کا باپ تھا۔۔ اس کا مقبرہ قلعہ جعبر کے اندر یا ...

                                               

سلیمیہ مسجد، قونیہ

سلیمیہ مسجد صوبہ قونیہ کے قرہ تائے، قونیہ ضلع میں واقع ہے۔ قرہ تائے، قونیہ ضلع قونیہ کا گنجان آباد ضلع ہے۔ اس کے قرب و جوار میں مشرقی سمت میں مولانا عجائب گھر اور مغرب سمت میں عزیزئیے مسجد، قونیہ واقع ہیں۔

                                               

شاہ سلطان (دختر سلیم ثانی)

شاہ سلطان سلطنت عثمانیہ کی شہزادی تھیں۔ وہ سلطان سلطنت عثمانیہ سلیم ثانی اور ملکہ نور بانو سلطان کی بیٹی تھیں۔ شاہ سلطان اپنی دادی ملکہ خرم سلطان اور سلطان سلیمان اول کی چہیتی شہزادی تھیں۔ وہ سلطان مراد ثالث کی بڑی بہن تھیں_

Free and no ads
no need to download or install

Pino - logical board game which is based on tactics and strategy. In general this is a remix of chess, checkers and corners. The game develops imagination, concentration, teaches how to solve tasks, plan their own actions and of course to think logically. It does not matter how much pieces you have, the main thing is how they are placement!

online intellectual game →